لکی مروت: محرم کے جلوس پر خود کش حملہ ناکام

آخری وقت اشاعت:  جمعـء 23 نومبر 2012 ,‭ 17:42 GMT 22:42 PST

اس خودکش حملے کے تیس منٹ بعد اسی مقام سے محرم کے جلوس نے گزرنا تھا۔

پاکستان کے صوبہ خیبر پختونخوا کے شہر لکی مروت میں ایک امام بارگاہ کے قریب محرم کے جلوس پر خودکش حملہ ناکام ہو گیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق ایک خودکش حملہ آور نے جس کی عمر پولیس کے ذرائع کے مطابق کافی کم تھی، محرم کے جلوس میں گھس کر دھماکہ کرنے کی کوشش کی مگر پولیس کے روکنے پر حواس باختہ ہو کر ایک گلی میں جاکر اپنے آپ کو دھماکےسے اڑا لیا۔

پشاور میں پولیس کے مرکزی کنٹرول روم کے مطابق اس حملے میں کسی قسم کا جانی نقصان نہیں ہوا اور نہ ہی کسی کے زخمی ہونے کی اطلاعات ہیں۔

لکی مروت دھماکے کے کچھ دیر بعد سرکاری ٹی وی پی ٹی وی نے گلگت کے علاقے سونوداس میں ایک دھماکہ کی اطلاع دی مگر گلگت کے سٹی پولیس سٹیشن سے رابطہ کرنے پر معلوم ہوا کہ یہ دھماکہ نہیں تھا۔

سٹی پولیس سٹیشن کے اہلکار عمران نے بی بی سی سے بات کرتے ہوئے بتایا کہ ایک گھر پر کسی نے دیسی ساختہ مواد پھینکا جس کے نتیجے میں اس گھر کی چھت میں ایک سوراخ ہوا اور کسی قسم کا جانی نقصان نہیں ہوا کیونکہ گھر میں اس وقت کوئی موجود نہیں تھا۔

لکی مروت میں ہونے والا دھماکہ محلہ سیداں میں واقع امام بارگاہ کے قریب ہوا اور اس خودکش حملے کے تیس منٹ بعد اسی مقام سے محرم کے جلوس نے گزرنا تھا۔

یاد رہے کہ ملک بھر میں بدھ کے روز دہشتگردی کے مختلف واقعات میں تیتس افراد ہلاک اور ستانوے زخمی ہوگئے تھے۔ صوبہ خیبر پختونخوا کے شہر پشاور میں گزشتہ روز پولیس کی دو چوکیوں پر حملے کیے گئے جن میں تین پولیس اہلکار ہلاک اور تین زخمی ہوئے تھے ۔

اسی بارے میں

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔