ایم کیو ایم کے چار ممبر قومی اسمبلی مستعفی

آخری وقت اشاعت:  پير 3 دسمبر 2012 ,‭ 20:01 GMT 01:01 PST

پاکستان کی قومی اسمبلی کی سپیکر نے متحدہ قومی موومنٹ کے چار ممبران کے استعفے منظور کر لیے ہیں۔

سرکاری ریڈیو سٹیشن ریڈیو پاکستان کے مطابق سید حیدر عباس رضوی، سید طیب حسین، فوزیہ اعجاز اور ڈاکٹر ندیم احسن مستعفی ہونے والے چار اراکین ہیں۔

ان چار اراکین نے ’ذاتی‘ وجوہات پر استعفے دیے ہیں۔ ان کے استعفے نومبر 29 سے لاگو ہوئے ہیں۔

دوسری جانب چیف الیکشن کمشنر فخرالدین جی ابراہیم نے کہا ہے کہ خالی ہونے والی چار نشستوں پر ضمنی انتخابات نہیں کرائے جائیں گے اور چاروں نشستیں اگلے عام انتخابات تک خالی رہیں گی۔

واضح رہے کہ ہفتے کو سندھ اسمبلی کے چھ اراکین نے بھی استعفے دیے تھے۔ تاہم انہوں نے استعفے دوہری شہریت کے حوالے سے الیکشن کمیشن میں حلف نامہ داخل نہ کرانے کی صورت میں دیے تھے۔

یاد رہے کہ بیرونِ ملک مقیم پاکستانیوں کے وفاقی وزیر اور متحدہ قومی موومنٹ کے رہنماء فاروق ستار نے پچھلے ماہ الیکشن کمیشن آف پاکستان سے دوہری شہریت کے بارے میں سپریم کورٹ کے فیصلے پر عمل درآمد روکنے کی درخواست کی تھی۔

سپریم کورٹ کے حکم کی روشنی میں کمیشن ان اراکین کی نشاندہی کرنے جا رہا ہے جن کی دوہری شہریت ہے۔ سپریم کورٹ نے آئین کے آرٹیکل 61(1)(سی) کے تحت دوہری شہریت والے اراکین کو نا اہل قرار دیا ہے۔

فاروق ستار کا موقف تھا کہ کیونکہ سپریم کورٹ کا تفصیلی فیصلہ آنے کو ہے، اس پر الیکشن کمیشن ابھی عمل درآمد نہ کرے۔ ان کا کہنا تھا کہ ’قانون میں دوہری شہریت کی اجازت ہے اور یہ سہولت دے کر اگر ان کو انتخابات لڑنے کا حق نہ دیں تو یہ آئین کی روح کے خلاف ہے۔‘

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔