بنوں: تھانے پر خودکش حملہ، آٹھ افراد ہلاک

آخری وقت اشاعت:  پير 10 دسمبر 2012 ,‭ 06:18 GMT 11:18 PST

بنوں میں کاکی تھانے پر خودکش حملوں میں آٹھ افراد ہلاک اور متعدد زخمی ہو گئے

پاکستان کے صوبہ خیبر پختون خوا کے ضلع بنوں میں پیر کی صبح کاکی تھانے پر خودکش حملے میں آٹھ افراد ہلاک اور متعدد زخمی ہو گئے۔

ایک مقامی پولیس اہل کار محمد غلام نے بی بی سی کو بتایا کہ آج صبح شدت پسندوں نے کاکی تھانے پر حملے کیے جس کے نتیجے میں خود کش حملہ آوروں سمیت آٹھ افراد ہلاک ہوگئے۔

ہلاک ہونے والوں میں تین پولیس اہل کار ، تین عام شہری اور دو خود کش حملہ آور شامل ہیں۔

اہل کار نے بتایا کہ اس حملے میں چار افراد زخمی ہو گئے ہیں جن میں دو پولیس اہل کار اور دو راہگیر شامل ہیں۔

اہل کار نے مزید کہا کہ تھانے پر خودکش حملوں کے بعد پولیس اور شدت پسندوں کے درمیان شدید فائرنگ کا تبادلہ ہوا۔

سرکاری ٹی وی کے مطابق چار خود کش حملہ آوروں نے حملے کے دوران اپنے آپ کو اڑا دیا۔ پی ٹی وی کے مطابق حملے میں تین پولیس اہل کاروں سمیت پانچ افراد ہلاک ہوئے ہیں۔ شدت پسندوں نے پہلے تھانے پر حملہ کیا اور اس کے بعد مسجد میں گھس گئے۔

زخمیوں کو ڈسٹرکٹ ہسپتال بنوں منتقل کر دیا گیا ہے۔

بی بی سی بات کرتے ہوئے طالبان کے ترجمان نے اس حملے کی ذمے داری قبول کرتے ہوئے کہا کہ اس حملے میں دو خودکش حملہ آوروں نے حصہ لیا۔ ان کے مطابق یہ حملہ انھوں نے بیت اللہ محسود کے بھتیجے کو پولیس مقابلے میں ہلاک کرنے کا بدلہ لینے کے لیے کیا تھا۔

کاکی تھانہ بنوں شہر سے تقریباً دس کلومیٹر جنوب میں واقع ہے جس کی حدود نیم قبائلی علاقے جانی خیل سے ملتی ہیں۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔