سوات میں دھماکہ 22 افراد ہلاک اور 55 زخمی

آخری وقت اشاعت:  جمعرات 10 جنوری 2013 ,‭ 15:19 GMT 20:19 PST

ڈی آئی جی مالاکنڈ اختر حیات گنڈاپور نے میڈیا کے نمائندوں سے بات کرتے ہوئے بتایا کہ یہ دھماکہ تخریبی کارروائی کا نتیجہ ہے۔

پاکستان کے صوبہ خیبر پختون خوا کے علاقے سوات میں پاکستان فوج اور پولیس کے مطابق ایک تبلیغی مرکز میں دھماکے کے نتیجے میں بائیس افراد ہلاک اور پچپن زخمی ہو گئے ہیں۔

ڈی آئی جی مالاکنڈ اختر حیات گنڈاپور نے میڈیا کے نمائندوں سے بات کرتے ہوئے بتایا کہ یہ دھماکہ تخریبی کارروائی کا نتیجہ ہے۔

اس سے قبل سوات کے ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر گل افضل آفریدی اور فوج کے ترجمان ادارے آئی ایس پی آر کے سوات میں ترجمان کرنل شاہد نے اسے گیس سیلنڈر کا دھماکہ قرار دیا تھا۔

اطلاعات کے مطابق سوات کے نواحی علاقے تختہ بند میں واقع تبلیغی مرکز میں نماز کے بعد ایک اجتماع ہو رہا تھا جس کے لیے بڑی تعداد میں لوگ بیان سننے کے لیے مرکز میں موجود تھے۔ مقامی لوگوں نے بتایا کہ اس دوران مرکز کے صحن میں ایک زور دار دھماکہ ہوا ہے۔

ڈی پی او سوات نے بی بی سی کو بتایا ہے کہ اس دھماکے میں بائیس افراد ہلاک اور پچپن سے زیادہ زخمی ہوئے ہیں ۔ زخمیوں اور ہلاک ہونے والے افراد کی لاشیں سیدو شریف ہسپتال میں پہنچا دی گئی ہیں اور ہسپتال میں ایمر جنسی نافذ ہے۔

تفصیلات کے مطابق بارہ لاشیں ناقابل شناخت حالت میں ہسپتال لائی گئی ہیں۔

مقامی لوگوں نے بتایا کہ اس دوران مرکز کے صحن میں ایک زور دار دھماکہ ہوا ہے۔

ہسپتال میں موجود ذرائع نے بتایا ہے کہ زخمیوں میں سے بیشتر کی حالت تشویش ناک ہے جس کی وجہ سے خدشہ ظاہر کیا جا رہا ہے کہ ہلاکتوں میں اضافہ ہو سکتا ہے۔

زرائع کے مطابق زخمیوں کو سلینڈر کے جلنے کے زخم نہیں لگے ہیں بلکہ زخموں سے لگتا ہے کہ یہ دھماکہ خیز مواد کے زخم ہیں۔

اس واقعے کے بعد فوج اور سکیورٹی اہلکاروں نے ہسپتال اور مرکز کو گھیرے میں لے لیا ہے ۔ مرکز اور اس کے قریب کے علاقوں میں بم ڈسپوزل سکواڈ کے اہلکار مذید تلاشی لے رہے ہیں۔

مقامی لوگوں نے اس دھماکے پر حیرت کا اظہار کرتے ہوئے کہاں ہے کہ ایک گیس سلنڈر سے اتنا بڑا دھماکہ کیسے ہو سکتا ہے اور اس کے علاوہ شب جمعہ کے دوران بڑا سلنڈر لانے کی کیا ضرورت تھی اور اسے مرکز کے اندر ہی کیوں رکھا گیا تھا جبکہ اس علاقے میں پہلے سے گیس موجود ہے۔

پولیس حکام کا کہنا ہے کہ اس واقعہ کی مذید تحقیقات کی جا رہی ہیں۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔