ہنگو میں نمازیوں پر خودکش حملہ، تئیس ہلاک

آخری وقت اشاعت:  جمعـء 1 فروری 2013 ,‭ 12:21 GMT 17:21 PST

ہنگو صوبہ خیبر پختونخوا اور قبائلی علاقے اورکزئی ایجنسی کے سنگم پر واقع ایک حساس ضلع ہے

پاکستان کے صوبہ خیبر پختونخوا کے ضلع ہنگو میں ایک خودکش حملے میں تئیس افراد ہلاک اور پچاس زخمی ہو گئے ہیں۔

ضلع ہنگو کے ڈپٹی کمشنر طاہر عباسی نے بی بی سی کو بتایا کہ یہ حملہ جمعہ کو پٹ بازار کے علاقے میں ایک مسجد کے باہر ہوا۔

ان کے مطابق جس وقت دھماکا ہوا اس وقت نمازی نمازِ جمعہ پڑھ کر باہر نکل رہے تھے۔

خودکش حملے کے فوری بعد امدادی کارروائیاں شروع کر دی گئیں اور ریسکیو ٹیموں نے جائے وقوعہ پر پہنچ کر لاشوں اور زخمیوں کو مقامی ہسپتال منتقل کیا۔

دھماکے کے بعد سکیورٹی فورسز کے اہلکاروں نے بھی علاقے کو گھیرے میں لے لیا اور شواہد اکٹھے کرنے کا کام شروع کر دیا۔

مقامی پولیس کا کہنا ہے کہ دھماکے میں ہلاک ہونے والے زیادہ تر افراد کا تعلق اہل تشیع سے ہے جبکہ ایک پولیس اہلکار بھی دھماکے کا نشانہ بنا ہے۔

یاد رہے کہ ہنگو شہر کا شمار خیبر پختونخوا کے انتہائی حساس علاقوں میں ہوتا ہے۔

یہ شہر دہشت گردی اور فرقہ وارانہ تشدد کے واقعات سے بری طرح متاثر رہا ہے۔اس ضلع کی سرحدیں تین قبائلی ایجنسیوں اورکزئی، کرم اور شمالی وزیرستان سے ملتی ہیں۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔