لاہور میں میٹرو بس سروس کا آغاز

آخری وقت اشاعت:  اتوار 10 فروری 2013 ,‭ 18:47 GMT 23:47 PST

پنجاب کے صوبائی دارالحکومت لاہور میں پبلک ٹرانسپورٹ کے ایک نئے منصوبے یعنی میٹرو بس سروس کا آغاز ہوگیا ہے۔

وزیر اعلیٰ پنجاب میاں شہباز شریف نے ترکی کے نائب وزیر اعظم کے ساتھ ایک بس میں سفر کرکے اس میٹرو بس سروس منصوبے کا افتتاح کیا۔

لاہور شہر میں شروع ہونے والی نئی بس سروس کی افتتاحی تقریب میں مسلم لیگ نون کےسربراہ نواز شریف کے علاوہ مختلف ممالک کے سفیروں نے بھی شرکت کی جنہیں میٹرو بس کے روٹ پر شہر کی سیر کرائی گئی۔

ترکی کے ماہرین کی مشاورت سے تیار ہونے والے اس منصوبہ کو گیارہ ماہ میں مکمل کیا گیا اور اس پر تیس ارب روپے کی لاگت آئی۔

میٹرو بس کے لیے سڑک پر ستائیس کلو میٹر لمبا الگ ٹریک تعمیر کیا گیا جس میں ساڑھے آٹھ کلو میٹر کا پل بھی شامل ہے۔میٹرو بس کے روٹ پر تین سو سیکیورٹی اہلکار مامور کیے گئے ہیں۔

"لاہور میٹرو بس سروس کے افتتاح کے لیے رنگا رنگ تقریب کا انعقاد کیا گیا جس کے راستے پر لوگ بڑی تعداد میں نظر آئے جو ترانے گا رہے تھے اور ایک جشن کا سماں تھا۔ بہت سے ایسے لوگ بھی آئے تھے جن کے راستے پر یہ بس سروس نہیں چلتی۔ یہ بس سروس لاہور کے کئی قدیم اور گنجان آباد علاقوں سے گزرتی ہے اس لیے سفر کافی دلچسپ تھا۔"

عباد الحق نامہ نگار بی بی سی اردو لاہور

پل پر بنائے گئے بس اسٹیشن پر جانے کے لیے عام سڑھیوں کے ساتھ ساتھ برقی سڑھیاں بھی لگائیں گئی ہیں۔

چالیس کلو میٹر فی گھنٹہ کے حساب سے چلنے والی میٹرو بس ایک گھنٹے سے بھی کم وقت میں شہر کے ایک کونےشاہدرہ سے دوسرے کونے گجومتہ کا سفر طے کرے گی۔

میٹرو بس کے روٹ پر ستائیس اسٹیشن قائم کیے گئے ہیں اور بسیں ہر تین منٹ کے وقفے سے چلا کریں گیں۔

افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیر اعلیْ پنجاب میاں شہباز شریف نے کہا کہ میٹرو بس طبقاتی نظام کو ختم کرنے کی طرف سے ایک قدم ہے۔

شہباز شریف کے بقول ساڑھے چار برس کے عرصے میں بس سروس پر مجوعی طور پر آنے والی لاگت واپس مل جائے گی۔وزیر اعلیٰ پنجاب نے اعلان کیا کہ وہ خود بھی اس بس میں سفر کیا کریں گے۔

میٹر بس پر سفر کرنے والے مسافروں کے لیے ای ٹکٹ کا نظام متعارف کروایا گیا ہے تاہم ایک مہینے کے لیے شہریوں کو مفت سفر کرنے کی سہولت ہوگی۔

افتتاح کے بعد میٹرو بس پر سفر کرنے والوں کا رش رہا اور کئی لوگ نئی بس پر سفر کیے بغیر واپس لوٹ گئے۔

دوسری جانب پنجاب میں مسلم لیگ ق کے رہنما اور نائب وزیر اعظم چودھری پرویز الہیٰ نے میٹرو بس پر نکتہ چینی کرتے ہوئے کہا کہ پنجاب کے فنڈز میٹرو بس پر خرچ کرکے صوبے کو کنگال کردیا گیا ہے۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔