بھارتی ماہی گیر جیل سے فرار

آخری وقت اشاعت:  منگل 12 فروری 2013 ,‭ 15:17 GMT 20:17 PST

پاکستان اور بھارت دونوں اپنی حدود کی خلاف ورزی کرنے والے ماہی گیروں کو گرفتار کرتے رہتے ہیں

کراچی میں محکمہ جیل خانہ جات نے ایک بھارتی ماہی گیر کے فرار ہونے کی تحقیقات کا حکم دے دیا ہے، جبکہ غفلت برتنے پر تین پولیس اہلکاروں کو معطل کر دیا گیا ہے۔

لانڈھی جیل کے سپرنٹینڈنٹ نصرت منگھن نے بی بی سی کو بتایا کہ کشور والد بھگوان بائی جیل کی چار دیواری کے باہر کوارٹرز کے قریب باغیچے میں صفائی کا کام کر رہا تھا کہ پیشاب کا بہانہ کرکے فرار ہوگیا۔

پولیس حکام کا کہنا ہے کہ اپنی نوعیت کا ماضیِ قریب میں یہ پہلا واقعہ ہے، جس کے بعد جیل میں موجود بھارتی ماہی گیروں پر سختی کردی گئی ہے۔

لانڈھی جیل میں اس وقت ڈھائی سو بھارتی ماہی گیر قید ہیں، جنہیں پاکستان کی سمندری حدود کی خلاف ورزی کرنے کے الزام میں گرفتار کیا گیا تھا۔

کشور کو جنوری کے آخری ہفتے میں پچاس دیگر ساتھیوں سمیت گرفتار کیا گیا تھا۔

وفاقی وزیر داخلہ رحمان ملک نے پچھلے دنوں تمام بھارتی ماہی گیروں کی رہائی کا حکم جاری کیا تھا لیکن اس پر تاحال عمل نہیں ہوسکا تھا۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔