’آئی سرجن اور بیٹا ٹارگٹ کلنگ میں ہلاک‘

آخری وقت اشاعت:  پير 18 فروری 2013 ,‭ 13:05 GMT 18:05 PST

پاکستان کے صوبہ پنجاب کے دارالحکومت لاہور میں شیعہ مسلک سے تعلق رکھنے والے ڈاکٹر اور ان کے گیارہ سالہ بیٹے کو فائرنگ کر کے ہلاک کردیا گیا ہے۔

لاہور کے علاقے گلبرگ پولیس کے مطابق جنرل ہسپتال کے آئی سپیشلسٹ ڈاکٹر سید علی حیدر پیر کی صبح اپنے گیارہ سالہ بیٹے مرتضیٰ علی حیدر کو سکول چھوڑنے کار پر جارہے تھے۔

پولیس کا کہنا ہے کہ وہ اور ان کا کمسن بیٹا ایف سی کالج کے پاس دو مسلح موٹر سائیکل سواروں نے ان کی گاڑی پر فائرنگ کردی۔ فائرنگ کے نتیجے میں آئی سرجن سید علی حیدر اور اور ان کے بیٹے ہلاک ہو گئے۔

لاہور کی گلبرگ پولیس نے سید علی حیدر اور ان کے گیارہ سالہ بیٹے مرتضیٰ حیدر کے قتل کے الزام میں نامعلوم حملہ آوروں کے خلاف انسداد دہشت گردی ایکٹ اور قتل کی دفعات کے تحت مقدمہ درج کرلیا ہے۔

لاہور میں حالیہ دنوں کے دوران فرقہ وارانہ شدت پسندی یہ پہلا واقعہ ہے۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔