سندھ: درگاہ میں دھماکے سے تین ہلاک

آخری وقت اشاعت:  پير 25 فروری 2013 ,‭ 18:48 GMT 23:48 PST
فائل فوٹو، سوات میں دھماکہ

پاکستان کے صوبہ سندھ کے ضلع شکار پور میں حکام کے مطابق ایک درگاہ پر دھماکے کے نتیجے میں تین افراد ہلاک اور چھبیس زخمی ہو گئے ہیں۔

ضلع شکار کے ایک گاؤں میں واقع درگاہ میں پیر کو مغرب کے وقت دھماکہ ہوا۔

لاڑکانہ ریجن کے ڈی آئی جی عبدالخالق شیخ کے مطابق درگاہ غازی غلام شاہ کے جانشین حاجن شاہ اور دیگر افراد ایک ہال میں بیٹھے ہوئے تھے کہ اس دوران وہاں دھماکہ ہوا۔

مقامی میڈیا کے بعد دھماکے کے نتیجے میں حاجن شاہ زخمی ہو گئے ہیں اور علاقے میں دھماکے کے خلاف احتجاجی مظاہرے شروع ہو گئے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ دھماکے کے نتیجے میں دو افراد ہلاک اور گیارہ زخمی ہو گئے اور بعد میں درگاہ سے مزید زخمیوں کو ہسپتال منتقل کیا گیا ہے۔

بعد میں ہسپتال میں زیر علاج ایک زخمی چل بسا جبکہ زخمیوں کی تعداد بھی چھبیس ہو گئی ہے۔

چند روز پہلےصوبہ سندھ کے ہی شہر جیکب آباد میں پولیس حکام کے مطابق ہونے والے ایک دھماکے میں علاقے کے با اثر مذہبی رہنما سید حسین شاہ قمبر والا زخمی ہو گئے اور ان کے پوتے شفیق شاہ ہلاک ہو گئے تھے۔

ڈی آئی جی عبدالخالق شیخ کا کہنا ہے کہ پولیس اندرون سندھ میں ان پرتشدد واقعات کی تحقیقات کر رہی ہے کیونکہ اندرون سندھ میں اس قسم کے واقعات نہیں ہوتے اور یہ بلکل ایک نیا رجحان ہے۔

انہوں نے کہا کہ اندرون سندھ میں عام تاثر یہ ہی ہے کہ لوگ مذہبی انتہا پسندی میں یقین نہیں رکھتے ہیں۔

’اب ایک ہی علاقے میں دوسری بار فرقہ وارانہ واقعہ ہے اوراب کوشش ہے کہ کسی نہ کسی طرح سے ان واقعات میں ملوث افراد تک پہچنا جائے اور جلد ہی یہ معلوم کر لیا جائے کہ ان واقعات میں کونسا نیا گروپ شامل ہے اور انہیں مقامی سطح پر کون مدد فراہم کر رہا ہے اور باہر سے کون لوگ آئے ہیں۔

خیال رہے کہ پاکستان میں مزاروں اور درگاہوں پر خودکش حملوں اور بم حملوں کے متعدد واقعات پیش آ چکے ہیں۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔