مظفرآباد میں مقامی لوگوں کے لیے نیا ہسپتال

آخری وقت اشاعت:  جمعـء 22 مارچ 2013 ,‭ 10:03 GMT 15:03 PST

اس ہسپتال میں جہاں مفت علاج ہوگا وہیں نئے ڈاکٹروں کو تربیت دینے کی بھی سہولیات مہیا کی جائیں گی۔

برطانیہ میں مقیم پاکستانی اور کشمیری ڈاکٹروں کی کوششوں سے پاکستان کے زیرِ انتظام کشمیر کے شہر مظفرآباد میں ایک نیا خیراتی ہسپتال تعمیر کیا گیا ہے۔

اس ہسپتال میں لوگوں کا مفت علاج کیا جائےگا جس کا پاکستانی کشمیر کے وزیرِاعظم چودھری عبدالمجید نے جمعرات کو افتتاح کیا۔

اس نوے بستر والے ہسپتال کو برطانیہ میں ڈاکٹروں کی تنظیم ’مڈ لینڈ ڈاکٹرز ایسو سی ایشن‘ کی مدد سے تعمیر کیا گیا ہے۔

ہسپتال کے چیئرمین ڈاکٹر سید یوسف افتخار کا کہنا ہے کہ اکتوبر دو ہزار پانچ میں آئے تباہ کن زلزلے کے بعد وہ اپنے ساتھیوں کے ساتھ خيبر پختونخوا میں امدادی کاموں کے لیے آئے تھے۔

ان کا کہنا تھا کہ اس دوران طبی سہولیات کی خراب حالات دیکھ کر ہی انہوں نے علاقے میں ایک خیراتی ہسپتال قائم کرنے کا فیصلہ کیا تھا۔

انہوں نے کہا کہ اس ہسپتال میں جہاں مفت علاج ہوگا وہیں نئے ڈاکٹروں کو تربیت دینے کی بھی سہولیات مہیا کی جائیں گی۔

ہسپتال کی عمارت اس طرح سے تعمیر کی گئی ہے کہ ری ایکٹر سکیل پر نو تک آئے زلزلے کے جھٹکوں کو وہ برداشت کر سکتی ہے۔

ڈاکٹر یوسف کے مطابق آپریشن اور علاج کے لیے ہر ماہ برطانوی ماہر سرجنوں کی ایک ٹیم اس ہسپتال کا دورہ کرےگی اور وہ اپنے تجربات یہاں کے نئے ڈاکٹروں کے ساتھ شیئر کریں گے۔

ان کا کہنا تھا کہ ہسپتال پر اب تک کئي کروڑ روپے خرج کیے جا چکے ہیں۔

اسی بارے میں

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔