’حکومت وادی تیراہ میں رٹ قائم کرنے میں ناکام‘

آخری وقت اشاعت:  پير 25 مارچ 2013 ,‭ 16:28 GMT 21:28 PST

پاکستان کمیشن برائے انسانی حقوق (ایچ آر سی پی) نے ملک کے قبائلی علاقے خیبر ایجنسی کے علاقے وادی تیراہ میں خراب صورتحال پر تشویش کا اظہار کیا ہے۔

کمیشن نے ایک بیان میں وادی تیراہ میں لڑائی کے باعث نقل مکانی کرنے والے افراد کے لیے جلوزئی میں قائم خیمے پر گزشتہ جمعہ کو ہونے والے بم دھماکے کی مذمت کی ہے۔

یاد رہے کہ اس دھماکے کے نتیجے میں کم ازکم 17افراد ہلاک ہوئے تھے۔

کمیشن نے بیان میں کہا ہے کہ یہ امر قابل افسوس ہے کہ حکومت وادی میں اپنی رٹ قائم کرنے میں ناکام ہے جہاں انتہا پسندوں نے گزشتہ کئی ماہ سے تشدد کا سلسلہ جاری رکھا ہوا ہے۔

’ایسا معلوم ہوتا ہے کہ تشدد کی حالیہ لہر کے بعد بیشتر علاقے پر حکومت کا کنٹرول ختم ہوگیا ہے۔‘

ایچ آر سی پی نے حکومت سے مطالبہ کیا کہ وہ وادی تیراہ میں دوبارہ کنٹرول حاصل کرنے کے لیے تمام ضروری اقدامات کرے۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔