کراچی: رینجرز کی گاڑی پر حملہ، چار ہلاک

Image caption کسی سیاسی جماعت کے شدت پسند گروہ کے ملوث ہونے کے امکانات کو رد نہیں جا سکتا: رینجرز ترجمان

کراچی میں پولیس کے مطابق کورنگی کے علاقے میں رینجرز کی گاڑی پر حملے میں چار اہلکار ہلاک ہوئے ہیں۔

پاکستان رینجرز کے ترجمان کے مطابق رینجرز کے جوان اپنا گشت مکمل کر کے آ رہے تھے کہ ایک زیر تعمیر سڑک پر نصب بم کو ریمورٹ کنٹرول سے اڑیا گیا جس کے نتیجے میں چار جوان ہلاک اور پانچ زخمی ہو گئے۔

رینجرز کے ترجمان نے کہا کہ اگرچہ اس حملے کی ذمہ داری کالعدم تحریکِ طالبان نے قبول کی ہے ’مگر کسی سیاسی جماعت کے شدت پسند گروہ کے اس کارروائی میں ملوث ہونے کے ممکنات کو رد نہیں کیا جا سکتا۔‘

گزشتہ چند ماہ میں سندھ رینجرز نے کالعدم تنظیموں کے ٹاگٹ کلرز، گینگ وار میں ملوث مجرموں، اور سیاسی جماعتوں کی پشت پناہی پر کام کرنے والے مجرموں کے خلاف آپریشن کا آغاز کیا ہے۔

رینجرز کے ترجمان کے مطابق اس کارروائی میں شدت کی وجہ سے رینجرز پر حملے کیے جا رہے ہیں تاکہ اس کارروائی سے انہیں باز رکھا جائے ’مگر ہمارے عزم کو کم نہیں کیا جا سکتا اور ہم ان جرائم پیشہ افراد کا خاتمہ کر کے ہیں رہیں گے۔‘

واضح رہے کہ کچھ عرصے قبل کراچی کے علاقے نارتھ ناظم آباد میں سچل رینجرز کے ہیڈ کوارٹر پر بارود سے بھری گاڑی سے حملہ کیا گیا تھا۔