افغان شدت پسندوں کا پاکستانی چوکی پر حملہ

Image caption شدت پسند ماضی میں بھی ایسی کارروائیاں کرتے رہے ہیں

پاکستانی حکام کا کہنا ہے کہ قبائلی علاقے کرم ایجنسی میں افغانستان سے آنے والے شدت پسندوں نے ایک سرحدی چوکی پر حملہ کیا ہے۔

سکیورٹی ذرائع نے بی بی سی کو بتایا کہ ہے یہ حملہ جمعرات کی صبح لوئر کرم میں علی زئی کے علاقے میں واقع ’بھٹی چیک پوسٹ‘ پر کیا گیا۔

حکام کا کہنا ہے کہ اس حملے میں دو سکیورٹی اہلکار زخمی ہوئے ہیں جبکہ جوابی کارروائی میں چار شدت پسندوں کو ہلاک کر دیا گیا ہے۔

طالبان شدت پسند ماضی میں بھی افغانستان سے سرحد پار کر کے پاکستانی علاقے میں حفاظتی چوکیوں اور سکیورٹی اہلکاروں کو نشانہ بناتے رہے ہیں۔

پاکستان کی جانب سے سرکاری سطح پر افغانستان سے اس قسم کی کارروائیاں کرنے والے شدت پسندوں کے خلاف کارروائی کا مطالبہ کیا جاتا رہا ہے۔

گزشتہ ہفتے پاکستانی فوج کی جانب سے افغانستان سے ہونے والی دراندازی کے مبینہ واقعے پر جوابی کارروائی بھی کی گئی تھی۔

تاہم اس کارروائی پر افغان حکام نے احتجاجاً اپنے فوجی وفد کا دورۂ پاکستان منسوخ کر دیا تھا۔

اس پر پاکستانی دفترِ خارجہ نے کہا تھا کہ افغانستان ضرورت سے زیادہ سخت رد عمل کا اظہار کر رہا ہے۔

اسی بارے میں