وانا: طالبان کی امیدواروں کو ہدایات

file photo
Image caption اس اجتماع میں صلاح الدین ایوبی کے نام سے مشہور ملا نذیر گروپ کے امیر بہاول خان نے ان امیدواران سے ملاقات کی اور انتخابات سے متعلق انہیں چار نکات بتائے۔

پاکستان میں وفاق کے زیر انتظام قبائلی علاقے جنوبی وزیرستان میں انتخابات کے حوالے سرگرمیاں جاری ہیں۔

جنوبی وزیرستان کے علاقے وانا میں طالبان کے مُلا نذیر گروہ نے علاقے سے انتخابات میں حصہ لینے والے تمام امیدواروں کو وانا بازار میں ایک پمفلٹ پھینک کر کری کوٹ کے علاقے میں قائم طالبان کے دفتر میں جمعے کو مدعو کیا۔

طالبان کے اس دفتر میں صلاح الدین ایوبی کے نام سے مشہور ملا نذیر گروپ کے امیر بہاول خان نے ان امیدواران سے ملاقات کی اور انتخابات سے متعلق انہیں چار نکات بتائے۔

انہوں نے کہا کہ حالات کی خرابی کی وجہ سے امیدواران وانا کے مرکزی بازار میں زیادہ جلسے جلوس نہیں کریں۔

اس کی وجہ انہوں نے بتائی کہ کیونکہ طالبان کے دیگر گروہ وہاں حملہ کرسکتے ہیں اس لیے اس قسم کی سرگرمیوں کو بازار میں منعقد نہ کیا جائے۔

تاہم انہوں نے کہا کہ ان امیدواروں کو مضافاتی علاقے میں جلسے جلوس نکالنے کی اجازت ہوگی۔

انہوں نے خصوصی طور پر تین سیاسی جماعتوں عوامی نیشنل پار ٹی، پاکستان پیپلز پارٹی اور ایم کیو ایم کو تنبیہ کی ہے کہ وہ اپنے جھنڈوں اور بینروں کی تشہیر نہ کریں کیونکہ طالبان کی بعض تنظیموں سے انکو خطرہ ہے اور اس حوالے سے ان کو دھمکیاں بھی ملی ہیں۔

انہوں نے کہا کہ جلسے جلوسوں اور تقاریر میں ایک امیدوار کسی دوسرے امیدوار کے خلاف کوئی نازیبا الفاظ استعمال نہیں کرے گا جس کی وجہ سےکسی جھڑپ یا لڑائی کا خطرہ پیدا ہو۔

حلقہ این اے اکتالیس جنوبی وزیرستان سے کھڑے ہونے والے اکیاون آذاد امیدواروں سے درخواست کی گئی ہے کہ اگر وہ غیر مقبول ہیں تو براہ مہربانی انتخابات میں اُمیدوار کی حیثیت سے کھڑے نہ ہوں۔

اسی بارے میں