نواز کا عمران کو گلدستہ، دوستانہ میچ کی دعوت

پاکستان کے شہر لاہور میں مسلم لیگ ن کے صدر میاں نواز شریف نے تحریک انصاف کے سربراہ عمران خان سے مختصر ملاقات کی ہے۔ نواز شریف نے شوکت خانم کینسر میموریل ہسپتال زیر علاج عمران خان کی عیادت کی اور انھیں پھولوں کا گلدستہ بھی پیش کیا۔

تحریک انصاف کے رہنما انتخابات سے چند روز قبل جلسے میں اسٹیج سے گر کر زخمی ہو گئے تھے۔ جس کے بعد سے وہ ہسپتال میں زیر علاج ہیں۔

ملاقات کے بعد نواز شریف نے میڈیا سے بات چیت میں کہا کہ وہ عمران خان کی جلد صحتیابی کے لیے دعاگُو ہیں تاکہ مل کر پاکستان کے مسائل کا حل تلاش کیا جائے۔مسلم لیگ ن کے رہنما کا کہنا تھا کہ عمران خان سے مختصر ملاقات کا موقع ملا۔ اُن کی طبعیت بہتر ہونے کے بعد دوبارہ ملاقات کریں گے۔

نواز شریف نے کہا کہ ہم دونوں نے غصے کو ختم کر دیا ہے اور عمران خان سے کہا ہے کہ اب ایک ’دوستانہ میچ‘ ہونا چاہیے۔

نواز شریف کا کہنا تھا کہ ملک کو اکٹھے مل کر مشکلات سے نکالنا چاہتے ہیں تاکہ ہماری آنے والی نسلوں کو اچھا پاکستان مل سکے۔ انھوں نے کہا کہ یہ تبھی ممکن ہو سکتا اگر سب مل کر کام کرئیں۔ نواز شریف نے بتایا کہ عمران خان نے بھی کہا کہ وہ بھی ان کے ساتھ ’اچھے تعلقات‘ چاہتے ہیں ۔

مسلم لیگ ن کے رہنما نے صوبہ خیبر پختوانخوا میں تحریک انصاف کے مینڈیٹ کو تسلیم کرتے ہوئے عمران خان کو مبارکباد دی۔ پاکستان تحریک انصاف کو خیبر پختوانخوا کی اسمبلی میں نمایاں اکثریت حاصل ہوئی ہے۔

انتخابات سے قبل جلسوں میں تحریک انصاف اور مسلم لیگ ن کے رہنماوؤں نے ایک دوسرے کے خلاف سخت موقف اختیار کیا تھا۔ خاص کر کہ تحریک انصاف کے سربراہ نے جلسوں میں شریف بردارن کی پالیسوں کو کڑی تنقید کا نشانہ بنایا تھا۔

امریکی سفیر سے ملاقات پر ایک سوال کے جواب میں نواز شریف کا کہنا تھا کہ وہ امریکہ سمیت تمام ممالک سے تعلقات چاہتے ہیں اور وہ مسائل کو بات چیت کے ذریعے خوش اسلوبی سے حل کرنا چاہتے ہیں۔

گیارہ مئی کو ہونے والے عام انتخابات میں مسلم لیگ ن نے وفاق اور پنجاب میں اکثریت حاصل کی ہے۔ وفاق میں مسلم لیگ ن کی حکومت بنانے کے واضح امکان کے بعد امریکہ بھارت اور افغانستان سمیت دنیا بھر کے سربراہانِ مملکت نے نواز شریف کو مبارکباد دی ہے۔