کوئٹہ:سات اخبارات کے مدیروں کے خلاف مقدمہ

  • 16 مئ 2013
فائل فوٹو، پاکستانی اخبارات
Image caption گزشتہ ماہ بھی ایک کالعدم تنظیم کے بیان کی اشاعت پر چار اخبارات کے خلاف مقدمہ درج کیا گیا تھا

پاکستان کے صوبہ بلوچستان کے دارالحکومت کوئٹہ میں کالعدم تنظیموں کے بیانات شائع کرنے پر سات اخبارات کے مدیروں، پبلشرز اور عملے کے دیگر افراد کے خلاف ایک اور مقدمہ درج کیا گیا ہے۔

بلوچستان یونین آف جرنلسٹ نے صحافیوں کے خلاف مقدمہ درج کرنے کی شدید الفاظ میں مذمت کی ہے ۔

کوئٹہ میں سٹی پولیس سٹیشن میں جن اخبارات کے ایڈیٹروں اور پبلشرز کے خلاف مقدمہ درج کیا ہے ان میں روزنامہ جنگ، مشرق، انتخاب، سنچری ایکسپریس، قدرت، باخبر اور زمانہ شامل ہیں۔

ان اخبارات کے خلاف انسداد دہشتگردی ایکٹ اور تعزیرات پاکستان کی مختلف دفعات کے تحت ایک اور مقدمہ درج کیا گیا ہے۔

واضح رہے کہ اس مقدمے سے قبل بھی سٹی پولیس نے ان ہی دفعات کے تحت مدیروں، پبلشرز اور نامہ نگاروں کے خلاف مقدمہ درج کر رکھا ہے۔

دریں اثناء بلوچستان یونین آف جرنلسٹ نے صحافیوں کے خلاف مقدمہ درج کرنے کے واقعات کی شدید الفاظ میں مذمت کی ہے۔

بلوچستان یونین آف جرنلسٹ کے صدر کی جانب جاری کیے جانے والے بیان میں کہا گیا ہے کہ صوبےمیں ایک طرف سیاسی جماعتوں اور کالعدم تنظیموں کی جانب سے صحافیوں کو دھمکیاں دی جا رہی ہیں تو دوسری طرف حکومتی سطح پر بھی صحافیوں پر دباؤ بڑھایا جا رہا ہے۔

بیان کے مطابق ان حالات میں بلوچستان میں صحافیوں کے لیے کام کرنا انتہائی دشوار اور مشکل ہوتا جا رہا ہے۔

بلوچستان یونین آف جرنلسٹ کے صدر عرفان سعید نے بیان میں مزید کہا ہے کہ اگر صحافیوں کے خلاف اس قسم کے ہتھکنڈوں کو بند نہ کیاگیا تو مستقبل قریب میں صحافی اپنے احتجاج کا حق محفوظ رکھتے ہیں۔

اسی بارے میں