چین سول نیوکلیئر ٹیکنالوجی میں مدد کرے: نواز شریف

  • 23 مئ 2013
Image caption میاں نواز شریف کا کہنا ہے کہ انہیں چینی وزیراعظم نے چین کا دورہ کرنے کی دعوت دی ہے

پاکستان کے متوقع وزیراعظم میاں نواز شریف نے کہا ہے کہ چین ماضی کی طرح پاکستان میں مزید سول نیوکلیئر ٹیکنالوجی پلانٹس لگانے میں مدد کرے تاکہ پاکستان میں توانائی کی ضروریات کو پورا کرنے کے لیے چھوٹے بڑے پراجیکٹس لگائے جاسکیں۔

ہمارے نمائندے محمود جان بابر کے مطابق یہ بات میاں نواز شریف نے جمعرات کو پاکستان کے دورے پر آئے چینی وزیرِاعظم لی کی چیانگ سے اسلام آباد میں ملاقات کے دوران کہی۔

اس ملاقات سے با خبر مسلم لیگ ن کے ایک رہنما نے نام ظاہر نہ کرنے کی شرط پر بی بی سی کو بتایا کہ میاں نواز شریف نے وزیراعظم لی کی چیانگ سے کہا کہ چین پاکستان کومدد دینے کی بجائے یہاں سرمایہ کاری کرے جس سے جہاں چین کوفائدہ ہوگا وہیں پرپاکستان میں روزگارکے مواقع بھی بڑھیں گے۔

انہوں نے کہا کہ چین اپنے طرز پر کی جانے والی انفراسٹرکچر کی ترقی سے پاکستان کو بھی فیض یاب کرے اور اس حوالے سے پاکستان کی مدد کرے اور پاکستان میں سرمایہ کاری اورتجارت پر توجہ مرکوز کرے۔

ان مسلم لیگی رہنما کے مطابق میاں نوازشریف نے چینی وزیراعظم سے کہا کہ وہ گوادرپورٹ کوجلد ازجلد آپریشنل بنائے تاکہ پاکستان میں تجارتی سرگرمیوں کوفروغ مل سکے۔

چینی وزیراعظم لی کی چیانگ سے ملاقات کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے مسلم لیگ ن کے سربراہ میاں نواز شریف نے کہا کہ دونوں ممالک مل کر خطے میں امن و امان اور معاشی ترقی کے لیے اہم کردار ادا کریں گے۔

انہوں نے کہا کہ ہم نے پروجیکٹس پر بات کی ہے، دفاعی و معاشی تعاون جاری رہے گا اور اقتصادی ترقی کو عروج پر لے کر جائیں گے۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان اور چین ہر معاملے میں ایک دوسرے پر اعتماد کرتے ہیں اور چین نے ثابت کیا ہے کہ وہ پاکستان کے ایک اہم دوست ہے۔

میاں نواز شریف کا کہنا ہے کہ انہیں چینی وزیراعظم نے چین کا دورہ کرنے کی دعوت دی ہے۔

پاکستان کی سرکاری ٹی وی کے مطابق چین کے وزیراعظم لی کی چیانگ سے ملاقات میں مسلم لیگ ن کے دیگر رہنما شہباز شریف، اسحاق ڈار،چوہدری نثار بھی شریک تھے جبکہ پاکستان کے سیکرٹری خارجہ جلیل عباس جیلانی نے بھی اس ملاقات میں شرکت کی۔

چین کے وزیرِاعطم دو روزہ دورے پر پاکستان آئے ہیں۔ دورے کے دوران دونوں ملکوں کے مابین اقتصادی اور دیگر شعبوں میں تکنیکی تعاون کے لیے مفاہمت کی یاداشت پر دستخط کئے گئے ہیں۔

وزیراغطم لی کی چیانگ نے دورے کے آخری دن پاکستان کی ایوانِ بالا یعنی سینیٹ کے اجلاس سے خطاب کیا ہے۔انھوں نے اپنے خطاب کہا کہ چین پاکستان کو بین الاقوامی سطح پر اہم کردار ادا کرتے ہوئے دیکھنا چاہتا ہے۔

انھوں نے کہا کہ پاکستان ایک عظیم ملک ہے اور گندھارا جیسی قدیم تہذیبوں کا مرکز ہے اور لاہورکاقلعہ،بادشاہی مسجد،موہنجودڑویہ سب پاکستانی ثقافت کی ترجمان ہیں۔

چین کے وزیراعظم لی کی چیانگ نے سینیٹ سے خطاب میں کہا کہ اُن کے دورے کا مقصد بھی پاکستان اور چین کی دوستی کو مزید وسعت دینا ہے۔

اسی بارے میں