بنوں: بارودی سرنگ پھٹنے سے ایک فوجی اہلکار ہلاک

Image caption اس دھماکے میں بم ڈسپوزل سکواڈ کی گاڑی تباہ ہو گئی

پاکستان کے قبائلی علاقے شمالی وزیرستان اور بنوں کے سرحدی علاقے میں بارودی سرنگ کے دھماکے میں ایک فوجی اہلکار ہلاک اور تین زخمی ہوگئے ہیں۔

یہ واقعہ شمالی وزیرستان اور بنوں کے سرحدی علاقے جانی خیل میں جمعے کی صبح تقریباً سات بجے کے قریب پیش آیا۔

ہمارے نامہ نگار دلاور خان وزیر کے مطابق فوجی قافلوں کے لیے راستہ کلیئر کرنے والے بم ڈسپوزل سکواڈ کی اپنی گاڑی بارودی سرنگ سے ٹکرائی جس کے نتیجے میں ایک فوجی اہلکار ہلاک اور تین زخمی ہوگئے۔

تینو زخمی اہلکاروں کو بنوں سی ایم ایچ منتقل کر دیا گیا۔

اس دھماکے میں بم ڈسپوزل سکواڈ کی گاڑی تباہ ہو گئی۔

واقعے کے بعد سکیورٹی فورسز نے علاقے کو گھیرے میں لے کر تحقیقات شروع کر دیں ہیں۔

صوبہ خیبر پختونخوا کا علاقہ ضلع بنوں کئی سالوں سے پرتشدد واقعات کی زد میں رہا ہے اور بالخصوص سکیورٹی ادارے شدت پسندوں کے پرتشدد کارروائیوں کے نشانے پر ہیں۔

ضلع بنوں میں مئی کے اوائیل میں پولیس تھانہ ڈومیل کے قریب پولیس کے رہائشی مکانات پر ایک خودکش دھماکے میں تین افراد ہلاک اور بیس زخمی ہوئے تھے۔

اس واقعے میں نمازِ فجر کے تھوڑی دیر بعد خودکش حملہ آور نے بارود سے لدی پک اپ پولیس کوارٹروں سے ٹکرا دی تھی۔

ضلع بنوں میں گذشتہ سال جولائی میں بھی پولیس کی ایک عمارت پر چار شدت پسندوں نے حملہ کیا تھا جس میں سے دو نے اپنے آپ کو اْڑایا تھا اور دو گرفتار ہوئے تھے۔

اس حملے میں تین پولیس اہلکار بھی زخمی ہوئے تھے۔

اسی بارے میں