رضا ربانی پی پی پی کے صدارتی اُمیدوار نامزد

پاکستان کی سابق حکمران جماعت پیپلز پارٹی نے آئندہ ماہ منعقد ہونے والے صدارتی انتخابات میں رضا ربانی کو صدارتی اُمیدوار نامزد کر دیا ہے جبکہ حکمران جماعت مسلم لیگ ن تاحال اپنے امیدوار کے نام کا فیصلہ نہیں کر پائی ہے۔

پاکستان پیپلز پارٹی کے سنیئر رہنما مخدوم امین فہیم نے جمعہ کی رات پریس کانفرنس میں صدارتی اُمیدوار کے لیے رضا ربانی کی نامزدگی کا اعلان کیا۔

انھوں نے کہا کہ پیپلز پارٹی کی کوشش ہے کہ حزب اختلاف میں شامل دیگر جماعتیں صدارتی انتخابات میں رضا ربانی کی حمایت کریں۔

ادھر ملک کی حکمران جماعت پاکستان مسلم لیگ اپنے صدارتی امیدوار کے نام پر مشاروت جاری رکھے ہوئے ہے۔

ریڈیو پاکستان کے مطابق اسلام آباد میں وزیراعظم نوازشریف کی زیرِ صدارت ہونے والے اہم اجلاس میں اس عہدے کے لیے سرتاج عزیز، سعید الزمان صدیقی، ممنون حسین، غوث علی شاہ، اقبال ظفر جھگڑا اور مہتاب عباسی کے ناموں کو مختصر فہرست میں شامل کیا ہے۔

اس کے علاوہ مسلم لیگ نون کے امیدوار کے لیے دوسروں جماعتوں کی حمایت حاصل کرنے کے لیے ایک کمیٹی بھی قائم کی گئی ہے جس میں خواجہ آصف، چوہدری نثار علی خان، شہبازشریف، احسن اقبال اور سعد رفیق شامل ہیں۔

جماعت کی اعلیٰ قیادت نے قومی و صوبائی اسمبلیوں میں اپنے تمام ارکان ' سینیٹروں اور وزراء کو صدارتی انتخاب کے باعث بیرون ملک جانے سے روک دیا ہے جبکہ بیرون ملک گئے ہوئے ارکان کو وطن واپسی کی ہدایت کی گئی ہے۔

قومی اور چاروں صوبائی اسمبلیوں اور سینیٹ پر مشتمل صدارتی الیکٹورل کالج میں اکثریتی جماعت ہونے کے ناطے امکان یہی ہے کہ آئندہ صدر پاکستان مسلم لیگ نواز ہی سے ہو گا۔

پاکستان کے موجودہ صدر آصف علی زردای کی عہدے کی پانچ سال کی مدت آٹھ ستمبر کو ختم ہو رہی ہے اور الیکشن کمیشن نے صدارتی انتخابات چھ اگست کو کروانے کا اعلان کیا ہے۔

الیکشن کمیشن کے مطابق کاغذات نامزدگی 24 جولائی کو جمع کرائے جائیں گے۔ کاغذات نامزدگی کی جانچ پڑتال 26 جولائی کو کی جائے گی جبکہ کاغذات واپس لینے کی آخری تاریخ 29 جولائی ہو گی۔

اسی بارے میں