آگاہی ایوارڈز: بی بی سی کی عالیہ نازکی بہترین خاتون اینکر

Image caption آگاہی ایوارڈ کی ویب سائٹ کے مطابق یہ پاکستان میں شعبۂ صحافت میں ایوارڈز دینے کا پہلا سلسلہ ہے

پاکستان کے دارالحکومت اسلام آباد میں منعقد ہوئے آگاہی جرنلزم ایوارڈز میں بہترین خاتون اینکر کا ایوارڈ بی بی سی اردو کے ٹی وی پروگرام سیربین کی اینکر عالیہ نازکی کو ملا ہے۔

آگاہی جرنلزم ایوارڈز کے تحت صحافت کے 20 مختلف شعبوں میں 50 صحافیوں کو بہترین کارکرگی پر ایوارڈز دیے گئے۔

سال 2013 کے لیے ان ایوارڈز کا عنوان ’صحافت کے مستقبل کی تشکیل‘ تھی جس کا اہتمام صحافت کے فروغ کے لیے کام کرنے والے اداروں آگاہی اور مشال نے کیا تھا۔

ان ایوارڈز کو میڈیا کے اخلاقیات کے بین الاقوامی سینٹر اور اقوامِ متحدہ کے ذیلی ادارے یونیسکو کے ساتھ مل کر ترتیب دیا گیا تھا۔

ایوارڈ جیتنے پر سیربین ٹی وی پروگرام کی اینکر عالیہ نازکی نے کہا ’ظاہر ہے میں بہت اچھا محسوس کر رہی ہوں۔ ان سب لوگوں کا بہت شکریہ جنھوں نے حوصلہ افزائی کی۔‘

انھوں نے کہا کہ سامنے میں ہوں لیکن سیربین کے پیچھے ایک بہت بڑی ٹیم ہے: ’ظاہر ہے میں نظر آتی ہوں لیکن سیربین کے پیچھے ایڈیٹرز، پروڈیوسرز اور ٹیکنیشینز کی بہت بڑی ٹیم ہے جو کام کرتے ہیں جس کی وجہ سے ہمارا پروگرام ایسا ہے۔ میں سامنے ہوں لیکن محنت ہم سب کی ہے۔‘

عالیہ نے کہا کہ ’بہت شکریہ ان سب کا جنھوں نے ہماری محنت کو سراہا۔‘

مشال کی طرف سے جاری ایک بیان کے مطابق ایوارڈز میں ’بہترین میزبان حالات حاضرہ پروگرام‘ اور ’بہترین نیوز چینل‘ کے بھی دو خصوصی شعبے رکھے گئے تھے۔ان دو شعبوں میں ایوارڈ دینے کا انحصار عوام کی پسند پر تھا جس کے لیے 60 لاکھ لوگوں نے سوشل میڈیا اور 15 لاکھ لوگوں نے ایس ایم ایس اور براہِ راست رابطہ کر کے اپنے پسند کے اینکر اور نیوز چینل کو ووٹ دیا۔

سال کے بہترین پسندیدہ حالات حاضرہ کے پروگراموں کے میزبان کے شعبے میں دو ابھرتے ہوئے اینکر پرسنز میں مردوں میں اے آر وائی کے اقرار الحسن اور خواتین میں بی بی سی اْردو کی عالیہ نازکی کامیاب قرار پائیں۔

اسی طرح سال کے بہترین تحقیقاتی صحافی کا ایوارڈ ایکسپریس ٹریبون کے اسد کھرل نے جیتا۔

مشال پاکستان کے چیف ایگزیکٹو آفیسر عامر جہانگیر نے بتایا کہ ایوارڈز کے لیے ملک بھر سے 1500 صحافیوں نے نامزدگیاں بھیجی تھیں جو خوش آئند بات ہے۔

ان کا ایوارڈز کا آغاز 28 مارچ 2012 کو کیا گیا تھا۔ صحافت کے ترقی کے لیے کام کرنے والے ادارے آگاہی اور مشال پاکستان ملک کے سرگردہ پریس کلبوں، میڈیا کی ترقی کے لیے کام کرنے والے مقامی اور بین الاقوامی اور دوسرے سرکاری و غیر سرکاری اداروں کے ساتھ مل کر اس ایوارڈ کا انعقاد کرتے ہیں۔

آگاہی کی ویب سائٹ کے مطابق در اصل یہ ایوارڈز پاکستان میں میڈیا کی ترقی کے لیے اقدامات میں اہم پیش رفت ہے۔

ان ایوارڈ کا مقصد صحافیوں کا اہم موضوعات پر کام کرنے کی کوششوں کو تسلیم کرنا اور سراہنا ہے۔ ان موضوعات میں تجارت و معاشیات، جرائم، تعلیم، جمہوری اقدار، توانائی، پانی اور خوراک، ماحولیات اور آب و ہوا کی تبدیلی، سیلاب اور قدرتی آفات، صنف، طرزِ حکمرانی، بدعنوانی، صحت، انسانی حقوق، ٹیکنالوجی، تفریحی معلومات، امن، میڈیا کی اخلاقیات، وغیرہ کی رپورٹنگ شامل ہیں۔

اسی بارے میں