ہم مذاکرات کو ڈرون حملے میں ہلاک نہیں ہونے دیں گے: پرویز رشید

Image caption امریکہ کا ڈرون حملوں کے حوالے سے ایک موقف ہے جس پر وہ قائم ہیں: پرویز رشید

وفاقی وزیر برائے اطلاعات و نشریات پرویز رشید نے کہا ہے کہ طالبان کے ساتھ مذاکرات میں کئی بار رکاوٹیں آئیں لیکن اس بار لگتا ہے کہ ’مذاکرات پر ڈرون حملہ ہوا ہے لیکن ہم مذاکرات کو ہلاک ہونے نہیں دیں گے‘۔

یہ بات وفاقی وزیر اطلاعات نے اسلام آباد میں میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہی۔

تاہم پرویز رشید نے امریکی ڈرون حملے میں کالعدم تحریک طالبان پاکستان کے امیر کی ہلاکت کے حوالے سے کچھ نہیں کہا۔

واضح رہے کہ پاکستان کے قبائلی علاقے شمالی وزیرستان میں دو امریکی ڈرون حملوں میں کالعدم تحریک طالبان پاکستان کے سربراہ حکیم اللہ محسود ہلاک ہوئے۔

طالبان کے ایک سینیئر رہنما نے تصدیق کی کہ شمالی وزیرستان کے علاقے ڈانڈے درپہ خیل میں ڈرون طیاروں نے حکیم اللہ محسود کے زیرِ استعمال ایک گاڑی اور ایک مکان کو نشانہ بنایا اور ان حملوں میں حکیم اللہ محسود سمیت پانچ افراد ہلاک ہوئے۔

حکیم اللہ محسود ایک ایسے وقت ڈرون حملے میں ہلاک ہوئے ہیں جبکہ سرکاری ذرائع ابلاغ کے مطابق حکومت کے ایک وفد نے سنیچر کو طالبان سے بات چیت کے لیے شمالی وزیرستان جانا تھا۔

پاکستان کے مقامی میڈیا کے مطابق وفاقی وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان نے اس ڈرون حملے کی مذمت کی ہے اور ڈرون حملے کے بعد پیدا ہونے والی صورتحال پر وزیراعظم نواز شریف سے بات کی ہے۔

یہ ڈرون حملہ ایک ایسے وقت ہوا ہے جب ایک دن پہلے وزیراعظم نواز شریف نے کہا تھا کہ پاکستانی طالبان سے بات چیت کا آغاز ہو چکا ہے جبکہ جمعہ کو ہی تحریک طالبان کے ترجمان شاہد اللہ شاہد نے مذاکرات شروع ہونے کی تردید کرتے ہوئے کہا کہ ابھی تک حکومت کی جانب سے ان سے کوئی رابطہ نہیں کیا گیا۔

ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ امریکہ کا ڈرون حملوں کے حوالے سے ایک موقف ہے جس پر وہ قائم ہیں۔

ایک اور سوال کے جواب میں ان کا کہنا تھا کہ نیٹو کی رسد بند کرنے سے ڈرون حملے بند نہیں ہوں گے۔ ’جب سلالہ چیک پوسٹ کے واقعے کے بعد نیٹو سپلائی بند کی گئی تو ڈرون حملے بند نہیں ہوئے تھے۔‘

انہوں نے کہا کہ جو جماعتیں نیٹو سپلائی روکنے کی بات کر رہی ہیں ان کو یہ حقیقت سمجھ لینی چاہیے۔

واضح رہے کہ پاکستان تحریک انصاف کے سربراہ عمران خان نے چند روز قبل شمالی وزیرستان میں ہونے والے ڈرون حملے کے بعد پریس کانفرنس میں کہا تھا کہ اگر امریکہ نے ڈرون حملے بند نہیں کیے تو نیٹو سپلائی کو روک دیا جائے گا۔

اسی بارے میں