’گولیوں سے چھلنی لاشیں ملنے کا سلسلہ بند ہو گیا ہے‘

اپ کی ڈیوائس پر پلے بیک سپورٹ دستیاب نہیں

نیشنل پارٹی کے سربراہ سینیٹر حاصل بزنجو نے کہا ہےگذشتہ تین چار ماہ میں بلوچستان کی صوبائی حکومت کی سب سے بڑی کامیابی یہ ہے کہ گولیوں سے چھلنی لاشیں ملنے کا سلسلہ بند ہو گیا ہے۔

بی بی سی اردو سروس کے ٹی وی پروگرام میں ایک انٹرویو میں میر حاصل بزنجو نے کہا کہ دوسری طرف صوبائی حکومت کو علیحدگی پسندوں کو مذاکرات کرنے پر قائل کرنے میں اب تک کوئی کامیابی حاصل نہیں ہوئی ہے۔

میر حاصل بزنجو نے انٹرویو میں اس امید کا اظہار بھی کیا کہ صوبائی حکومت لاپتہ افراد کے مسئلے کو حل کرنے میں جلد کامیابی حاصل کر لے گی۔ انھوں نے کہا کہ وہ اس مسئلے کو حل کرنے کی کوششیں کر رہی ہے۔

انھوں نے کہا کہ صوبائی حکومت نے اقتدار سنبھالنے سے پہلے وفاقی حکومت اور اسٹیبلشمنٹ پر یہ واضح کر دیا تھا کہ بلوچستان کو مسخ شدہ لاشوں، لاپتہ افراد اور متوازی تنظیموں جیسے تین بڑے مسائل کا سامنا ہے اور اگر ان تینوں مسائل کو حل کرنے میں صوبائی حکومت کی مدد نہ کی گئی تو پھر ان کا اقتدار میں آنا بے سود ہو گا۔

انھوں نے کہا کہ وفاقی حکومت اور فوج اس بات پر متفق تھی کہ بلوچستان میں جو کچھ ہو رہا ہے وہ نہ پاکستان، نہ بلوچستان اور نہ ہی فوج کے حق میں ہے۔

میر حاصل بزنجو نے کہا کہ انھیں گذشتہ کل جماعتی کانفرنس، جس میں وزیر اعظم کے علاوہ فوج کے سربراہ اور ملک کی باقی قیادت بھی موجود تھی، علیحدگی پسندوں یا شدت پسندوں سے بات کرنے کا اختیار دیا گیا۔ انھوں نے کہا کہ اب یہ ان کی ذمہ داری ہے کہ وہ ان عناصر کو سمجھائیں کہ وہ ریاست اور آئینِ پاکستان کے اندر رہ کر بلوچ حقوق کے لیے بات کریں۔

نیشنل پارٹی کے سربراہ نے اس بات کا اعتراف کیا اب تک انھیں شدت پسندوں سے مذاکرات شروع کرنے میں کوئی کامیابی حاصل نہیں ہوئی ہے۔

لاپتہ افراد کے معاملے پر لوگوں میں پائی جانے والی مایوسی کے بارے میں انھوں نے کہا کہ مسخ شدہ لاشوں کا ملنا لاپتہ افراد کے معاملے سے بڑا اور سنگین مسئلہ تھا۔ انھوں نے کہا کہ وہ ان لوگوں اور گھرانوں کی اذیت کو سمجھ سکتے ہیں جن کے عزیز لاپتہ ہیں۔

انھوں نے کہا کہ جن کی لاشیں مل گئی ہیں انھیں تو صبر آ گیا ہے لیکن جن لوگوں کے بارے میں کچھ علم نہیں وہ مستقل اذیت میں ہیں۔

میر حاصل بزنجو نے کہا وہ اس مسئلے کو حل کرنے کی کوشش کر رہے ہیں اور انھوں نے امید ظاہر کی کہ اسے جلد حل کر لیا جائے گا۔

اسی بارے میں