لاہور: فائرنگ سے تحریک انصاف کے رہنما ہلاک

Image caption پولیس کے مطابق مقتول کی دشمنی بھی تھی تاہم اصل حقائق تحقیقات کے بعد سامنے آئیں گے

پاکستان کے صوبہ پنجاب کے دارالحکومت لاہور کے قریب نامعلوم افراد کی فائرنگ سے تحریک انصاف کے رہنما سمیت پانچ افراد ہلاک ہو گئے۔

تحریک انصاف کے سربراہ مقصود علی بھٹی سنیچر کو فیروز پور روڑ سے لاہور سے قصور جا رہے تھے کہ لِلیانی ٹول پلازہ کے قریب ان پر نامعلوم افراد نے فائرنگ کر دی۔

مقامی ذرائع ابلاغ کے مطابق فائرنگ کے نتیجے میں مقصود علی بھٹی اور ان کے تین محافظ موقع پر ہی ہلاک ہو گئے جبکہ ان کے دوست زخمی ہو گئے جو بعد میں زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے چل بسے۔

وزیراعلیٰ پنجاب شہباز شریف نے واقعے کا نوٹس لیتے ہوئے آئی جی پنجاب کو تحقیقات کا حکم دیا ہے۔

اطلاعات کے مطابق مقصود علی بھٹی گیارہ مئی کے انتخابات میں قصور سے پنجاب اسمبلی کی نشست پر تحریک انصاف کے امیدوار تھے۔

پولیس حکام کا کہنا ہے کہ مقصود علی بھٹی کی دشمنیاں بھی تھیں اور بظاہر یہ واقعہ پرانی دشمنی کا نتیجہ نکلتا ہے تاہم تحقیقات کے بعد ہی اصل ملزمان کا اندازہ ہو سکے گا۔

اطلاعات کے مطابق مقصود علی بھٹی کی ہلاکت کے خلاف ان کے حامیوں نے لاہور قصور روڑ پر احتجاجی مظاہرہ بھی کیا ۔

اسی بارے میں