ڈی آئی خان: پولیو کی سکیورٹی ٹیم پر حملہ، دو پولیس اہل کار ہلاک

فائل فوٹو تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption دونوں پولیس اہلکار موقع ہی پر ہلاک ہوئے

پاکستان کے صوبہ خیبر پختونخوا کے جنوبی ضلعے ڈیرہ اسماعیل خان میں حکام کا کہنا ہے کہ نامعلوم افراد نے فائرنگ کرکے پولیو کارکنوں کی حفاظت پر مامور دو پولیس اہل کاروں کو ہلاک کر دیا ہے۔

پولیس کے مطابق یہ واقعہ منگل کو ڈیرہ اسمعیل خان شہر سے تقریباً 25 کلومیٹر دور احمد گڑھ کے علاقے میں درابن ژوب روڈ پر پیش آیا۔

ڈیرہ ٹاؤن پولیس سٹیشن کے انچارج عبد اللہ خان نے بی بی سی کو بتایا کہ انسداد پولیو کی ٹیموں کو سکیورٹی فراہم کرنے والے دو پولیس اہل کار ڈیوٹی ختم کرکے پولیس لائن آرہے تھے کہ اس دوران ان پر نا معلوم مسلح افراد کی طرف سے اندھا دھند فائرنگ کی گئی ۔

انھوں نے کہا کہ حملے میں دونوں اہل کار موقع ہی پر ہلاک ہوئے۔

پولیس کے مطابق منگل کو ڈیرہ اسماعیل خان کے دور افتادہ علاقوں میں بچوں کو پولیو کے قطرے پلائے جارہے تھے اور اس سلسلے میں مختلف علاقوں میں پولیو کارکنوں کے ہمراہ پولیس اہلکاروں کو تعینات کیا گیا تھا۔

خیال رہے کہ ڈیرہ اسمعیل خان میں پولیو کارکنوں کی سکیورٹی پر مامور اہل کاروں پر یہ اپنی نوعیت کا پہلا حملہ قرار دیا جارہا ہے۔

تاہم اس سے قبل صوبے کے دیگر اضلاع بالخصوص پشاور اور قبائلی علاقوں میں پولیو کارکنوں پر کئی مرتبہ حملے ہو چکے ہیں جس میں پولیو کارکن اور ان کی حفاظت پر مامور درجنوں اہل کار مارے جاچکے ہیں۔

گذشتہ سال ان حملوں میں سب سے زیادہ اضافہ دیکھا گیا اور اس دوران صرف خیبر پختونخوا میں تقریباً 20 افراد ہلاک ہوئے۔

اب تک ان حملوں کی ذمہ داری براہ راست کسی تنظیم نے قبول نہیں کی ہے تاہم حکام کی جانب سے ان کا شک شدت پسندوں تنظیموں پر کیا جاتا رہا ہے۔

اسی بارے میں