مزید ایف 16 طیارے پاک فضائیہ میں شامل

Image caption ایئر چیف مارشل نے کہا کہ اردن دوست ملک ہے جس نے یہ جنگی طیارے کم انتہائی قیمت میں فراہم کیے

پاکستان کی فضائیہ نے اردن سے خریدے گئے پانچ ایف 16 جنگی طیارے اپنے فضائی دستے میں شامل کیے ہیں۔

پاکستان کے خبر رساں ادارے اے پی پی کے مطابق پاک فضائیہ نے اْردن کی شاہی فضائیہ سے خریدے گئے ایف 16 جنگی طیاروں کی پہلی کھیپ اتوار کو مصحف علی میر ایئر پیس پر اپنے دستے میں شامل کی۔

اس موقعے پر ملک کے ایئر چیف مارشل طاہر رفیق بٹ مہمانِ خصوصی تھے، جنھوں نے کہا کہ پاک فضائیہ اندرونی یا بیرونی چیلنجوں سے نمٹنے کی مکمل اہلیت رکھتی ہے۔

انھوں نے کہا کہ اردن کے ساتھ 13 ایف 16 جنگی طیاروں کی خریداری کا سمجھوتہ فروری سنہ 2013 میں ہوا تھا اور اردن سے ان طیاروں کی دوسری کھیپ جلد ہی پہنچ جائے گی۔

انھوں نے کہا کہ حکومت اور مسلح افواج اس جدید دور کے جنگی تقاضوں میں فضائیہ کی اہمیت سے بخوبی واقف ہے۔

ایئر چیف مارشل نے کہا کہ اردن دوست ملک ہے جس نے انتہائی کم قیمت میں یہ جنگی طیارے فراہم کیے۔

پاکستانی پائلٹوں نے ان جنگی طیاروں کو اردن سے براہ راست پاکستان تک اڑایا۔ پاکستانی فضائی حدود میں داخل ہونے کے بعد پاک فضائیہ کے میراج اور ایف 16 طیاروں نے ان طیاروں کی رہنمائی کی۔

ان ایف 16 جنگی طیاروں کو 19 نمبر سکواڈرن میں شامل کیا جائے گا جو جولائی سنہ 1991 سے سنہ 1993 تک ایئر چیف مارشل طاہر رفیق بٹ کے زیرِ کمان رہا۔

ان جنگی طیاروں کو پاک فضائیہ کے دستے میں شامل کرنے کی تقریب میں پاکستان میں اردن کے سفیر اور پاکستان کے فضائیہ اور فوج کے اعلیٰ عہدیداروں نے شرکت کی۔

اسی بارے میں