نواب شاہ: زلزلے کے متعدد جھٹکے، ایک شخص ہلاک

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption ہسپتال کے ذرائع نے بتایا ہے کہ پہلے مرحلے پر 22 افراد ہسپتال لائے گئے

پاکستان کے صوبہ سندھ کے شہر نواب شاہ میں علی الصبح زلزلوں کے جھٹکوں کے بعد ایک شخص ہلاک اور 20 سے زیادہ زخمی ہو گئے ہیں۔ زلزلے کے بار بار جھٹکوں کے باعث بہت سے شہری سڑکوں پر نکل آئے ہیں اور گھروں میں جانے سے خوف زدہ ہیں۔

سرکاری خبر رساں ادارے ریڈیو پاکستان کے مطابق ریکٹر سکیل پر زلزلے کی شدت 5.0 تھی۔

حکام کا کہنا ہے کہ رات تین بج کر 51 منٹ پر آنے والے ابتدائی جھٹکے کی وجہ سے لوگ نیند سے ہڑبڑا کر اٹھ گئے۔

بعض لوگوں نے بتایا ہے کہ نیند سے بیدار ہو کر انھوں نے دیکھا کہ ان کے گھروں کی ہر چیز ہل رہی تھی۔ اس خوف میں لوگ اپنے گھروں سے باہر نکلے آئے۔

حکام کا کہنا ہے کہ زلزلے سے ضلع بے نظیر آباد کے دیگر علاقے بھی متاثر ہوئے ہیں ۔

ہسپتال کے ذرائع نے بتایا ہے کہ پہلے مرحلے پر 22 افراد ہسپتال لائے گئے۔ ان میں سے کئی لوگوں کے سروں پر زخم تھے۔ ہسپتال کے عملے کے ایک اہل کار نے بتایا کہ تمام زخمی دیواریں اور کچے مکانات کی چھتیں گرنے کی وجہ سے زخمی ہوئے ہیں۔

ہسپتال میں موجود ایک صحافی نے بتایا ہے کہ ڈاکٹروں نے پانچ افراد کو شدید زخمی قرار دیا ہے۔

ابتدائی جھٹکوں کے بعد دوسرا جھٹکا صبح چار بج کر 11 منٹ پر محسوس کیا گیا جس کے بعد ہسپتال کے وارڈوں میں موجود مریض بھی کمروں سے نکل کر باہر کھلے آسمان کے نیچے آ گئے۔

تیسرا جھٹکا چار بج کر 50 منٹ پر آیا، جس نے لوگوں میں مزید خوف پیدا کر دیا۔

ایک صحافی کا کہنا ہے کہ ہسپتال میں ڈاکٹر اور عملہ موجود تھا جس کی وجہ سے زخمیوں کو ابتدائی طبی امداد فوری طور مل گئی۔

شہر بھر میں خوف کے باوجود کئی اسکولوں کے بچے اپنے اپنے اسکولوں کو جانے کے لیے اپنے گھروں سے نکل گئے تھے۔

اسی بارے میں