کراچی: جنگی طیارہ بس اڈے پر گر کر تباہ، تین ہلاک

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption پاکستان ایئرفورس کا طیارہ بلدیہ ٹاؤن کےعلاقے میں بس ٹرمنل پرگرنے سے دو بسیں مکمل طور پر تباہ ہو گئیں

پاکستان کے شہر کراچی میں پاکستانی فضائیہ کا ایک لڑاکا طیارہ ’آپریشنل ٹرینگ مشن‘ کے دوران گر کر تباہ ہوگیا۔ طیارے میں سوار دونوں پائلٹوں سمیت تین افراد ہلاک ہوگئے۔

پاکستانی فضائیہ کے ترجمان نے بی بی سی سے بات کرتے ہوئے اس بات کی تصدیق کی ہے کہ کراچی کے علاقے بلدیہ ٹاؤن میں منگل کی صبح تربیتی پرواز کے دوران فضائیہ کا ایک لڑاکا طیارہ گر کر تباہ ہوگیا۔

پاکستان فضائیہ کا طیارہ تباہ، تصاویر

ترجمان نے بتایا کہ یہ طیارہ کراچی میں واقع مسرور ایئر بیس سے اڑا تھا۔

انھوں نے بتایا کہ ہلاک ہونے والے پائلٹ ونگ کمانڈر خرم صمد اور سکواڈرن لیڈر عمیر الٰہی تھے۔

ترجمان کا کہنا تھا کہ فضائیہ نے طیارے کے حادثے کی وجوہات معلوم کرنے کے لیے انکوائری کا حکم دے دیا ہے تاہم بظاہر یہ ایک تکنیکی خرابی معلوم ہوتی ہے۔

ترجمان کا کہنا تھا کہ طیارہ تربیتی مشق کے لیے مخصوص مقام کی جانب پرواز کے متعین راستے پر ہی سفر کر رہا تھا تاہم ان کے راستے میں زمین پر گنجان آبادی تھی۔

جب ان سے پوچھاگیا کہ کیا پاکستان فضائیہ آبادی والے علاقوں کی فضا میں تریبتی پروازیں اڑاتی ہے تو ان کا کہنا تھا کہ یہ طیارہ تربیتی علاقے کی جانب گامزن تھا۔

ترجمان نے کہا پاکستان فضائیہ کی مشق جاری رہے گی۔

اسی بارے میں