پشتو زبان کی گلوکارہ گلناز کو قتل کر دیا گیا

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters
Image caption پولیس نے بتایا کہ گلناز کے بھائی نے گلناز کے شوہر پر حملہ کرنے کا دعویٰ کیا ہے تاہم اس بارے میں تحقیقات کی جا رہی ہیں

خیبر پختونخوا کے دارالحکومت پشاور میں پشتو زبان کی گلوکارہ گلناز کو ان کے گھر میں قتل کر دیا گیا ہے۔

یہ واقعہ پشاور میں صدر کے علاقے کے قریب گلبرگ میں پیش آیا۔ مقامی پولیس کے ایک اہلکار نے بتایا کہ چار افراد شاہ سٹریٹ میں گلناز عرف مسکان کے گھر میں داخل ہوئے اور ان پر فائر کھول دیا۔

پولیس کا کہا ہے کہ ابتدائی رپورٹ کے مطابق حملہ آوروں نے ایک ہی گولی چلائی جس سے وہ زخمی ہوگئیں اور ہسپتال میں دم توڑ دیا۔

پولیس کا کہنا ہے کہ جس وقت گلناز پر فائرنگ کی گئی، اس وقت ان کے گھر میں ان کی بہن، بہنوئی اور بھائی بھی موجود تھے۔

پولیس اہلکار نے بتایا کہ گلناز کے بھائی نے گلناز کے شوہر پر حملہ کرنے کا دعویٰ کیا ہے تاہم اس بارے میں تحقیقات کی جا رہی ہیں۔

گلوکارہ گلناز کے عمر 40 سال تک بتائی گئی ہے اور ان کے متعدد گانے اور البم مارکیٹ میں آئے ہیں۔

کچھ عرصہ پہلے پشتو زبان کی گلوکارہ غزالہ جاوید کو بھی پشاور کے علاقے ڈبگری میں فائرنگ کر کے ہلاک کردیا گیا تھا۔ ان کے قتل کے الزام میں پولیس نے ان کے شوہر جہانگیر کو گرفتار کیا تھا۔

اسی بارے میں