قومی وطن پارٹی کے رہنما کے حجرے پر حملہ، چھ افراد ہلاک

تصویر کے کاپی رائٹ AP
Image caption بخت بیدار کا تعلق قومی وطن پارٹی سے ہے اور وہ ان دنوں عمرے کے ادائیگی کے لیے سعودی عرب میں ہیں

پاکستان کے صوبہ خیبر پختونخواہ کے ضلع دیر لوئر میں پولیس حکام کے مطابق سابق ایم پی اے بخت بیدار کے حجرے پر نامعلوم مسلح افراد کے حملے میں پولیس اہلکار سمیت چھ افراد ہلاک ہوگئے ہیں۔

تھانہ اسبنڑ کے محرر محمد بشیر نے بی بی سی کو بتایا کہ واقعہ پیر اور منگل کے درمیا نی شب ترناؤ کے علاقے میں پیش ایا۔

ان کے مطابق حملے میں ہلاک ہونے والے چھ افراد میں سابق ایم پی اے بخت بیدار کا ایک بھائی اسحاق ، ایک پولیس اہلکار زاہد ، ایک پیش امام قاری کفایت اور تین مہمان شامل ہیں۔ان افراد کوگولیاں مار کر ہلاک کیا گیا۔

پولیس کے مطابق واقعے کے بعد علاقے میں پولیس اور سیکورٹی فورسز نے مشترکہ سرچ اپریشن شروع کردیا تاہم اخری اطلاعات تک کسی قسم کی گرفتاری عمل میں نہیں آئی۔

سابق ایم پی اے بخت بیدار کا تعلق قومی وطن پارٹی سے ہے اور وہ ان دنوں عمرے کے ادائیگی کے لیے سعودی عرب میں ہیں۔

واضح رہے کہ اس علاقے میں اس سے پہلے بھی پولیس پوسٹ پر حملے میں ایک پولیس اہلکار کو ہلاک کیا گیا تھا۔ علاقے میں ہونے والے اس قسم کی کاروائیوں کے وجہ سے لوگوں میں خوف و ہراس پایا جاتا ہے۔

اسی بارے میں