ملتان: باراتیوں کی کشتی الٹنے سے 17 ہلاک

تصویر کے کاپی رائٹ AP
Image caption کشتی میں سوار تمام افراد ایک ہی خاندان کے لوگ تھے جو ایک شادی میں شریک تھے

پاکستان کے صوبہ پنجاب کے شہر ملتان میں سیلاب کے نتیجے میں دریائے چناب میں طغیانی کے باعث باراتیوں کی کشتی الٹنے سے دولہا سمیت 17 افراد ہلاک ہوگئے۔

ملتان سے مقامی صحافی محمد ارتضیٰ نے بی بی سی بات کرتے ہوئے بتایا کہ دریائے چناب میں شیر شاہ کے قریب طغیانی کے باعث باراتیوں سے بھری کشتی توازن قائم نہ رکھ سکی اور الٹ گئی۔

اس کشتی میں مقامی حکام کے مطابق کل 37 افراد سوار تھے جن میں سے ریسکیو رضاکاروں نے 20 افراد کو تو زندہ بچا لیا جن میں دلہن شامل ہے۔

اس کے علاوہ دولہے سمیت 17 افراد کی لاشیں نکال لی گئی ہیں اور ہلاک ہونے والوں میں دو بچے بھی شامل ہیں اور تمام افراد کا تعلق ایک ہی خاندان سے ہے۔

کشتی کنارے سے صرف دو سو میٹر کے فاصلے پر اس وقت الٹی جب کنارے سے آنے والی تیز لہروں کی وجہ سے خوف کے باعث سواریوں میں بھگدڑ مچی۔

تمام لاشوں اور زندہ بچ جانے والوں کو نشتر ہسپتال ملتان منتقل کیا جارہا ہے۔

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption فوج اور بحریہ کے غوطہ خوروں نے 17 افراد کی لاشیں نکال لی ہیں جبکہ بہت سے دیگر افراد کو زندہ بچا لیا گیا ہے

واضح رہے کہ گذشتہ ہفتے ہونے والی طوفانی بارشوں کے بعد دریائے چناب میں شدید سیلابی کیفیت پیدا ہوگئی ہے جس سے پنجاب کے مختلف علاقوں میں حالات بہت خراب ہیں اور وسیع رقبہ زیرِ آب آ چکا ہے۔

اس سے قبل پاکستان کے قدرتی آفات سے نمٹنے کے قومی ادارے نے کہا تھا کہ پنجاب کے سیلاب سے متاثرہ علاقوں سے پاکستان فوج، ریسکیو 1122 اور دیگر محکموں کی مدد سے 276681 افراد کو محفوظ مقامات پر منتقل کیا گیا ہے۔

اسی بارے میں