کراچی میں فائرنگ سے اے این پی کے مقامی رہنما ہلاک

تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service
Image caption کراچی میں اس سے پہلے بھی عوامی نیشنل پارٹی کے کئی رہنماؤں اور کارکنوں کو ٹارگٹ کلنگ میں نشانہ بنایا گیا

پاکستان کے سب سے بڑے شہر کراچی میں نامعلوم افراد کی فائرنگ سے عوامی نیشنل پارٹی کے مقامی رہنما ہلاک ہو گئے ہیں۔

کراچی کے علاقے اورنگی ٹاؤن میں ضلعی صدر ڈاکٹر ضیاالدین کو نامعلوم مسلح افراد نے فائرنگ کر کے ہلاک کر دیا۔

ابھی تک ملزمان کا سراغ نہیں مل سکا ہے جبکہ پارٹی کی اعلیٰ قیادت نے اس واقعے کی شدید مذمت کی ہے۔

عوامی نیشنل پارٹی کے کارکن اور مقامی قیادت کراچی میں وزیراعلیٰ ہاؤس کے سامنے احتجاج کرنے پہنچ گئے۔

مظاہرین ملزمان کی فوری گرفتاری کا مطالبہ کر رہے تھے جبکہ وزیراعلیٰ ہاؤس کے سامنے احتجاج کے بعد پولیس اور ریجنرز اہلکاروں کی اضافی نفری تعینات کی گئی۔

کراچی میں اس سے پہلے بھی عوامی نیشنل پارٹی کے کئی رہنماؤں اور کارکنوں کو ٹارگٹ کلنگ میں نشانہ بنایا گیا ہے۔

شہر میں دیگر سیاسی جماعتوں کے علاوہ مذہبی جماعتوں کے رہنما اور کارکن بھی شدت پسندی کے واقعات میں نشانہ بن چکے ہیں۔

دو دن پہلے ہی جمعے کی رات کو کراچی میں متحدہ قومی موومنٹ کی رکن سازی کیمپ پر ’کریکر‘ حملے کے نتیجے میں ایک درجن سے زائد افراد زخمی ہوگئے تھے۔

کراچی میں امن و امان کی صورتحال کو معمول پر لانے کے لیے گذشتہ سال ستمبر سے نیم فوجی دستے رینجرز کی قیادت میں محدود آپریشن جاری ہے جس میں سینکڑوں ملزمان کو گرفتار کرنے کا دعویٰ کیا گیا ہے۔

اسی بارے میں