بدعنوان ممالک کی فہرست: پاکستان، بھارت کی درجہ بندی بہتر

تصویر کے کاپی رائٹ UNIAN
Image caption جنوبی ایشیا میں افغانستان کی حالت سب سے خراب بتائی گئی ہے جسے ٹرانسپیرنسی انٹرنیشنل کی فہرست میں 12 پوائنٹس ملے ہیں

ٹرانسپیرنسی انٹرنیشنل نے دنیا کے 175 ممالک میں بدعنوانی کے تصور سے منسلک اس سال کی فہرست جاری کی ہے جس کے مطابق پاکستان کے درجے میں ایک پوائنٹ کی بہتری آئی ہے۔

2014 کے انڈیکس کے مطابق پاکستان 29 پوائنٹس کے ساتھ 126 ویں مقام پر ہے جب کہ پڑوسی ملک بھارت 38 پوائنٹس کے ساتھ 85ویں درجے پر ہے۔

بھارت کی درجہ بندی میں بھی پچھلے سال کے مقابلے میں بہتری آئی ہے۔ پچھلے سال بھارت 36 پوائنٹس کے ساتھ 94 ویں نمبر پر تھا۔

اس فہرست میں کہا گیا ہے کہ اقتدار کا غلط استعمال، خفیہ سودے اور رشوت خوری عالمی سطح پر معاشروں کو برباد کر رہے ہیں۔

جنوبی ایشیا میں افغانستان کی حالت سب سے خراب بتائی گئی ہے، جسے ٹرانسپیرنسی انٹرنیشنل کی فہرست میں 12 پوائنٹس ملے ہیں اور وہ فہرست میں 172 ویں مقام پر ہے۔ گذشتہ سال افغانستان 175ویں نمبر تھا۔

فہرست کے مطابق 100 پوائنٹس والے ملک کو تقریباً بدعنوانی سے پاک سمجھا جاتا ہے اور زیرو کا مطلب حالات ناگفتہ بہ ہیں۔

رپورٹ کے مطابق فہرست میں شامل 175 ممالک میں سے دو تہائی اب بھی 50 پوائنٹس سے نیچے ہیں۔

ٹرانسپیرنسی انٹرنیشنل کی فہرست میں پہلے نمبر پر ڈنمارک جبکہ نیوزی لینڈ اور فن لینڈ دوسرے اور تیسرے نمبر پر ہیں۔

اس فہرست میں صومالیہ اور شمالی کوریا آخری نمبر پر ہیں۔

اسی بارے میں