’مٹھی بھر لوگ اپنے انجام تک پہنچیں گے‘

تصویر کے کاپی رائٹ AFP

پاکستانی فوج کے سربراہ جنرل راحیل شریف نے کہا ہے کہ بلوچستان کے لوگوں کی حب الوطنی اور یکجہتی کی بدولت نفرت اور دہشت کو استعمال کرنے والے مٹھی بھر لوگ اپنے انجام تک پہنچیں گے۔

منگل کو کوئٹہ میں بلوچستان سے فوج میں بھرتی ہونے والے جوانوں کی پاسنگ آؤٹ پریڈ کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ یہ امر باعث اطمینان ہے کہ موجودہ حکومت ترقی اور قیامِ امن کے لیے اہم کردار ادا کر رہی ہے۔

بری فوج کے سربراہ کے مطابق اس کاوش میں فوج حکومت کے ساتھ ہے اور اس کے ساتھ ہر قسم کا تعاون کر رہی ہے۔

انھوں نے کہا ’کسی بھی ملک کی ترقی میں تعلیم کا کردار اہم ہے اور فوج بلوچستان میں تعلیم کے فروغ میں بھی اہم کردار ادا کر رہی ہے۔

فوج کے زیرِ اہتمام بلوچستان میں تعلیمی اور دیگر شعبوں میں ترقیاتی منصوبوں کا ذکر کرتے ہوئے انھوں نے کہا کہ سوئی ایجوکیشن سٹی سمیت دیگر تعلیمی اداروں میں 38 ہزار طالب علم تعلیم حاصل کر رہے ہیں۔

جنرل راحیل شریف کا کہنا تھا کہ فوج نے اب تک بلوچستان میں 700 کلومیٹر روڈ تعمیر کی ہے جبکہ 500کلومیٹر روڈ کی تعمیر پر کام جاری ہے۔

انھوں نے کہا کہ جن شاہراہوں پر کام جاری ہے ان میں پنجگور، ہوشاب، خضدار شہداد کوٹ اور چمن قلات شامل ہیں جن کی تعمیر سے بلوچستان میں ترقی کی نئی راہیں کھلیں گی۔

ان کا کہنا تھا کہ اس کے علاوہ فوج کے زیرِ اہتمام ترقیاتی منصوبے جاری ہیں جن میں چمالانگ، دکی مائنز، کاسہ ماربلز اور سوئی میں پانی کی فراہمی کا منصوبہ شامل ہے جن سے ایک لاکھ سے زائد افراد کو روزگار کے مواقع ملے ہیں۔

فوج کے سربراہ نے کہا کہ پاکستانی فوج قومی یکجہتی کی علامت ہے اور اس چیز کو مدنظر رکھتے ہوئے بلوچستان کے ہزاروں نوجوانوں کو بطور افسر اور سپاہی فوج میں شامل کیا گیا ہے اور یہ عمل آئندہ بھی جاری رہے گا۔

انھوں نے اس یقین کا اظہار کیا کہ بلوچستان کے جوان بھی ملکی دفاع میں کسی سے بھی پیچھے نہیں رہیں گے۔

’یہ امر باعث مسرت ہے کہ بلوچستان کے ہر علاقے اور ہر زبان بولنے والوں کی فوج میں نمائندگی شامل ہے۔ یہ تمام حقائق اس امر کی عکاسی کرتے ہیں کہ پاکستان فوج حقیقی طور پر آپ کی اپنی فوج ہے اور ہر مشکل میں آپ ہمیں ساتھ پائیں گے۔‘

اسی بارے میں