’پاکستان اور چین کے درمیان سٹریٹیجک تعاون ضروری ہے‘

تصویر کے کاپی رائٹ ISPR
Image caption بری فوج کے سربراہ امریکا اور برطانیہ کے اہم دوروں میں پاکستان کی فوج کی جانب سے جاری آپریشن پر ان ممالک کے اعلی حکام کو آگاہ کر چکے ہیں

پاکستان کی بری فوج کے سربراہ جنرل راحیل شریف نے اتوار کو بیجنگ میں چین کے سینٹرل ملٹری کمیشن کے وائس چیئرمین جنرل فان سے ملاقات کی ہے۔

ریڈیو پاکستان کے مطابق پاکستانی فوج کے تعلقاتِ عامہ کے ادارے آئی ایس پی آر کا کہنا ہے کہ جنرل فان نے پاکستان کے ساتھ یکجہتی کا اظہار کرتے ہوئے آپریشن ضرب عضب کی تعریف کی اور اسے دہشت گردوں کے خلاف سخت اور بلا امتیاز کارروائی قرار دیا۔

جنرل فان نے دہشت گردی کے خلاف قومی اتفاق رائے اور اس خلاف جنگ میں پاکستان کی کوششوں اور قربانیوں کو سراہا۔

انھوں نے جنرل راحیل شریف کو اس مشن میں چین کے مکمل تعاون کا یقین دلایا۔

اس موقع پر وائس چیئرمین سینٹرل ملٹری کمیشن جنرل فان نے کہا کہ پاکستان اور چین اہم قریبی ملک ہیں اور دونوں کے درمیان مضبوط تعلقات اور سٹریٹیجک تعاون ضروری ہے۔

جنرل راحیل شریف نے کہا کہ پاکستانی فوج قوم کی حمایت سے دہشت گردی کے خاتمے کے لیے پر عزم ہے اور اس مقصد کو پورا کرنے کی خطر کسی بھی حد تک جائے گی۔

خیال رہے کہ اس سے قبل آرمی چیف امریکا اور برطانیہ کے اہم دوروں میں پاکستان کی فوج کی جانب سے جاری آپریشن پر ان ممالک کے اعلی حکام کو آگاہ کر چکے ہیں۔

آئی ایس پی آر کے مطابق چین کے دو روزہ دورے کے دوران بری فوج کے سربراہ چین کی سیاسی اور عسکری قیادت سے بھی ملاقاتیں کریں گے۔

اسی بارے میں