سینیٹ الیکشن کا شیڈیول تبدیل، ووٹنگ اب پانچ مارچ کو ہوگی

تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service
Image caption پاکستانی سینیٹ میں موجود آزاد اراکین کی کُل تعداد 11 ہے جن میں سے چھ ریٹائر ہو جائیں گے

پاکستان کے الیکشن کمیشن نے ملک کے ایوان بالا یعنی سینیٹ کے انتخابات کا شیڈیول تبدیل کر دیا ہے اور اب یہ انتخابات تین مارچ کی بجائے پانچ مارچ کو ہوں گے۔

الیکشن کمیشن کے مطابق انتخابات کی تاریخوں میں تبدیلی لاہور ہائی کورٹ کے فیصلے کی روشنی میں کی گئی ہے جو عدالت عالیہ نے گیارہ فروری کو ایک درخواست کی سماعت کے بعد دیا۔

نئے شیڈیول کے تحت جمع کروائے گئے کاغذات نامزدگی کی جانچ پڑتال 19 اور 20 فروری کو ہوگی۔

کاغذات نامزدگی مسترد ہونے کی صورت میں درخواستیں 23 اور 24 فروری کو الیکشن کمیشن کے سیکرٹری اور صوبائی الیکشن کمشنر کے پاس جمع کروائی جاسکتی ہیں جبکہ ان اپیلوں پر فیصلہ 26 اور 27 فروری کو سنایا جائے گا۔

کاغدات نامزدگی واپس لینے کی آخری تاریخ 28 فروری ہے جبکہ اسی روز امیدواروں کی حتمی فہرست شائع کردی جائے گی۔

پارلیمنٹ ہاؤس اور چاروں صوبائی اسمبلیوں میں سینیٹ کے انتخابات کے لیے پولنگ پانچ مارچ کو ہوگی۔

پانچ مارچ کو سینیٹ کی 52 نشستوں کے لیے انتخاب ہونا ہے۔

آئینِ پاکستان کے تحت صوبوں، اسلام آباد اور فاٹا سے تعلق رکھنے والے سینیٹ کے نصف ارکان ہر تین سال بعد ریٹائر ہوتے ہیں۔

ایوانِ بالا میں اس وقت سب سے زیادہ نشستیں پاکستان پیپلز پارٹی کے پاس ہیں جس کے اراکین کی تعداد 40 ہے اور اس میں سے 21 اراکین 11 مارچ کو ریٹائر ہو جائیں گے۔

حکمران جماعت مسلم لیگ ن کے اراکینِ سینیٹ کی تعداد 16 ہے جن میں سے آٹھ کی نشستیں خالی ہو رہی ہیں۔

اسی بارے میں