سٹیٹ بینک نے شرح سود میں مزید کمی کر دی

تصویر کے کاپی رائٹ bbc
Image caption نئی پالیسی کا اطلاق 24 مارچ بروز منگل سے ہوگا

سٹیٹ بنک آف پاکستان نے آئندہ دو ماہ کے لیے شرح سود میں مزید 50 بیس پوائنٹس یا نصف فیصد کی کمی کا اعلان کیا ہے جس کے بعد یہ شرح آٹھ فیصد ہوگئی ہے۔

یہ ایک دہائی سے زیادہ عرصے میں پاکستان میں سب سے کم شرحِ سود ہے۔

نئی پالیسی کا اطلاق 24 مارچ بروز منگل سے ہوگا۔

سرکاری ریڈیو کے مطابق مرکزی بینک کا کہنا ہے کہ رواں مالی سال کے دوران اقتصادی ترقی مثبت سمت کی جانب جا رہی ہے اور اس سال مجموعی قومی پیداوار کی شرح نمو پچھلے مالی سال کی نسبت یقینی طور پر زیادہ رہے گی۔

سٹیٹ بینک کے مطابق مہنگائی کی شرح میں کمی ہو رہی ہے اور مرکزی بنک نے اس امر کا بھی اظہار کیا ہے کہ مہنگائی کی شرح آٹھ فیصد کے سالانہ ہدف سے کم رہنے کی توقع ہے۔

حکومت کا دعویٰ ہے کہ موجودہ اقتصادی سال دوران اس کی مثبت کاوشوں سے پہلے چھ ماہ کے دوران اقتصادی خسارے میں کمی آئی ہے۔ اور شرح منافع اور خام مال کی قیمتوں میں کمی کے باعث اقتصادی اور پیداواری سرگرمیوں میں اضافہ ہوگا۔