آؤ پکڑ لو مجھے

تصویر کے کاپی رائٹ EPA
Image caption ایم کیو ایم کے ہیڈ کوارٹر نائن زیرو سے نیٹو کنٹینروں سے چرایا گیا جدید اسلحہ برآمد ہوا: رینجرز

میرے محلے کے قادرو بھینگے کا کہنا ہے کہ اس نے تو آج تک پتہ نہیں توڑا تو سیلے لولی کا بازو کیسے توڑ سکتا ہے۔ سیلا لولی کہتا ہے کہ میں نے تو آج تک پستول ہاتھ میں لے کر نہیں دیکھا تو قادرو کو گولی کیسے مار سکتا ہوں۔

رینجرز کا ترجمان کہتا ہے کہ ایم کیو ایم کے ہیڈ کوارٹر نائن زیرو سے نیٹو کنٹینروں سے چرایا گیا جدید اسلحہ برآمد ہوا۔ امریکی سفارتی ترجمان کہتا ہے کہ نیٹو نے کبھی کراچی کے راستے نہ اسلحہ منگوایا نہ بھیجا۔

صولت مرزا کہتا ہے کہ میں نے جو بھی قاتلانہ وارداتیں کیں الطاف حسین سمیت ایم کیو ایم کی ہائی کمان کے کہنے پر کیں۔الطاف حسین کہتے ہیں کہ میں اور قتل کے احکامات ؟ استغفراللہ ۔۔لعنت اللہ علی الکٰذبین۔اگر صولت مرزا مجرم ہے تو اسے پھانسی چڑھا دیا جائے۔

پیپلز امن کمیٹی کے مفرور رہنما عزیر جان بلوچ کہتے ہیں کہ وہ جرائم پیشہ بھتہ گیر نہیں بلکہ انھیں لیاری کے حقوق مانگنے کی سزا مل رہی ہے اور جتنی بھی کرپشن اور جرائم ہیں وہ پیپلز پارٹی کے رہنما کررہے ہیں۔ پیپلز پارٹی کی قیادت کہتی ہے کون عزیر جان بلوچ ۔اگر اس نام کا کوئی شخص جرائم میں ملوث نہیں تو اسے عدالتوں سے بھاگنے کی بھی ضرورت نہیں اور پیپلز پارٹی کی عوام دوست قیادت پر بہتان طرازی کی بھی ضرورت نہیں۔

کراچی اور پنجاب کے پولیس سربراہ اس تاثر کو سختی سے رد کرتے ہیں کہ پولیس اکثر مفرور ملزموں کو گرفتار کرکے جعلی مقابلوں میں ہلاک کردیتی ہے یا ان کی گرفتاری تب ظاہر کرتی ہے جب تمام معلومات گنے کے رس کی طرح نکلوا کر انہیں کھوکل کردیا جاتا ہے۔

پاکستان کے تمام مذہبی رہنما اور جماعتیں کہتی ہیں کہ دہشت گردی میں ملوث افراد کا اسلام چھوڑ انسانیت سے لینا دینا نہیں۔کوئی مسلمان کسی بےگناہ کو نشانہ بنانے کا سوچ بھی نہیں سکتا۔ یہ سب اسلام و ملک دشمن ایجنٹوں کے خفیہ ہاتھوں کی کارستانی ہے۔ اور خفیہ ہاتھ بھی یہی کہتے ہیں کہ یہ سب خفیہ ہاتھوں کا کیا دھرا ہے۔

سپاہِ صحابہ کہتی ہے اس کا لشکرِ جھنگوی سے کوئی لینا دینا نہیں۔حکومتِ پنجاب کہتی ہے کہ اس کے کسی سابق و حاضر وزیر کا سپاہِ صحابہ سے کبھی کوئی لینا دینا نہیں رہا ۔

پاکستان کے تمام فوجی و نیم فوجی و سویلین ادارے کہتے ہیں کہ وہ شہریوں کی جبری گمشدگی میں قطعاً ملوث نہیں ۔

سابق وفاقی وزیرِ داخلہ رحمان ملک کے بھائی خالد ملک کہتے ہیں کہ سپر ماڈل آیان علی کے قبضے سے جو پانچ لاکھ ڈالر برآمد ہوئے اُن سے ہمارا کوئی تعلق نہیں۔

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters
Image caption دنیا کا ہر ملک امن بقائے باہمی اور اچھی ہمسائیگی پر یقین رکھنے کا دعویٰ کرتا ہے

دہلی کا دفترِ خارجہ کہتا ہے کہ بھارت پرامن بقائے باہمی اور اچھی ہمسائیگی پر یقین رکھتا ہے۔ اسلام آباد میں وزارتِ خارجہ کا ترجمان بھی بعینہہ یہی کہتا ہے۔ اور ایران و سعودی عرب بھی اپنے اپنے بارے میں یہی کہتے ہیں اور امریکہ بھی خود کو یہی کہتا ہے اور اسرائیل بھی ۔۔۔

جب سب ہی قانون پسند، پرامن اور شریف ہیں تو پھر جو کچھ بھی میرے محلے سے لے کے دنیا کے آخری کونے تک لچ تلا جارہا ہے وہ کون تل رہا ہے۔

اگر سب ہی بے گناہ ہیں تو پھر مجھے ہی گرفتار کر لو۔ میں اعتراف کرتا ہوں کہ ساڑھے سات ارب کی اس دنیا میں جو بھی برا ہورہا ہے اس کا ذمہ دار صرف اور صرف میں ہوں اور جو کچھ بھی اچھا ہو رہا ہے وہ قادرو بھینگے، سیلے لولی، صولت مرزا، الطاف حسین، رینجرز، نیٹو، پیپلز پارٹی، پولیس، آیان علی، عزیر جان بلوچ، خالد ملک، لشکرِ جھنگوی، سپاہِ صحابہ بشمول تمام مذہبی و سیاسی جماعتوں، فوجی و نیم فوجی و سویلین اداروں اور ایجنسیوں، بھارت، ایران، سعودی عرب، امریکہ اور اسرائیل سمیت 205 ممالک کے سبب ہے۔

آؤ پکڑ لو مجھے کہ تمہاری دنیا پرسکون ہوجائے۔

اسی بارے میں