’کراچی آپریشن جرائم پیشہ اور مسلح گروہوں کے خلاف ہے‘

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption نواز شریف نے قانون نافذ کرنے والوں کو ہر ممکن تعاون کی یقین دہا نی کرواتے ہوئے کہا کہ کراچی آپریشن کو منتقیٰ انجام تک پہنچایا جائے گا

پاکستان کے وزیراعظم نواز شریف کا کہنا ہے کہ کراچی میں دہشت گردوں کے خلاف جاری آپریشن کسی جماعت کے خلاف نہیں بلکہ مجرموں کے خلاف ہے۔

بدھ کو کراچی کے مختصر دورے پر وزیراعظم نواز شریف نے کور کمانڈر کراچی لیفٹینٹ جنرل نوید مختار اور ڈائریکٹر جنرل رینجرز میجر جنرل بلال اکبر سے ملاقات کی اور کراچی میں دہشت گردوں کے خلاف آپریشن پر بریفنگ لی۔

وزیراعظم نے قانون نافذ کرنے والے اداروں کو ہر ممکن تعاون کی یقین دہانی کرواتے ہوئے کہا کہ کراچی آپریشن کو منطقیٰ انجام تک پہنچایا جائے گا۔

وزیراعظم میاں نواز شریف نے پنجاب میں بھی فرقہ ورانہ تنظیموں کے خلاف کارروائی کرنے کا عندیہ بھی دیا ہے۔

وزیراعظم نواز شریف نے کراچی سٹاک ایکسچنج میں بہترین کارکردگی کا مظاہرے کرنے والی کمپنیوں کو انعامات دینے کی تقریب میں شرکت بھی کی اور کہا کہ کراچی میں امن و استحکام جلد بحال ہو گا۔

سٹاک ایکسچنج میں منعقدہ تقرتب سے خطاب میں نواز شریف نے کہا کہ یہ تاثر غلط ہے کہ کراچی آپریشن کسی سیاسی جماعت کے خلاف ہے۔

انھوں نے کہا کہ ’جرائم پیشہ افراد کے خلاف آپریشن تمام سیاسی جماعتوں کی مشاورت سے شروع ہوا تھا۔ آپریشن کے ذریعے ہم شہر میں جرائم کو روکنے اور کسی حد تک کم کرنے میں کامیاب بھی ہوئے ہیں۔‘

تصویر کے کاپی رائٹ PID
Image caption وزیراعظم نواز شریف نے کہا کہ کراچی میں جرائم پیشہ افراد کے خلاف آپریشن تمام سیاسی جماعتوں کی مشاورت سے شروع ہوا

وزیراعظم نے کہا کہ کراچی میں ایک بڑا مسئلہ اغوا برائے تاوان تھا اور اب شہر میں ٹارگٹ کلنگ، اغوا برائے تاوان اور بھتہ خوری میں کمی آئی ہے۔

نواز شریف نے کہا کہ کراچی کا آپریشن کسی پارٹی کے خلاف نہیں ہے مجرموں کے خلاف ہے کوئی بھی مجرم چاہے وہ کہیں بھی ہے بچ نہیں سکے گا، یہ مسلح ملیشیا اور فرقہ ورایت میں ملوث افراد پنجاب یا سندھ کہیں بھی ہوں، انھیں بچ نکلنے کا راستہ نہیں دینا ہے۔‘

وزیراعظم نے کہا کہ فرقہ ورانہ جرائم میں ملوث تنظیموں کے خلاف پنجاب میں بھی کارروائی ہو گی۔

یاد رہے کہ آ پریشن ضرب عضب سے قبل پاکستان پیپلز پارٹی اور دیگر جماعتیں پنجاب میں مسلم لیگ ن حکومت پر صوبے میں فرقہ ورانہ تنظیموں کے خلاف کارروائی نہ کرنے پر سنگین الزامات عائد کرتی رہی ہیں۔

متحدہ قومی موومنٹ کے مرکز نائن زیرو پر چھاپے کے بعد وزیر اعظم میاں نواز شریف کا کراچی کا یہ دوسرا دورہ ہے۔ ایم کیو ایم کے رہنما فیصل سبزواری کا کہنا ہے کہ ان کی جماعت نے وزیر اعظم سے ملاقات کی کوشش کی ہے لیکن انھیں ملاقات کا وقت نہیں دیا گیا۔

وزیراعظم نواز شریف نے کہا ہے کہ کراچی میں قیام امن کے بغیر پاکستان اقتصادی اہداف حاصل نہیں کر سکتا ہے۔ انھوں نے کہا کہ پاکستان ہمسایہ ممالک سے تعلقات استوار کر رہا تھا اور افغانستان اور پاکستان کے درمیان نئے تعلقات کا آغام ہوا ہے، جو خطے میں خوشحالی کے لیے بہت اہم ہے۔

اسی بارے میں