سعودی سالمیت کو خطرے پر بھرپور ساتھ دینے کا فیصلہ

تصویر کے کاپی رائٹ PID
Image caption پاکستان نے سول اور فوجی نمائندوں کا اعلیٰ سطحی وفد جمعے کو سعودی عرب جائے گا

حکومتِ پاکستان نے کہا ہے کہ وہ سعودی عرب کی علاقائی سالمیت کو خطرے لاحق ہونے کی صورت میں اس کا بھرپور ساتھ دے گا۔

یاد رہے کہ جمعرات کو سعودی فوج نے یمن میں صدر ہادی کی درخواست پر شیعہ حوثی قبائلیوں کے خلاف فوجی آپریشن شروع کیا۔ اور اس کا دعویٰ ہے کہ اسے پاکستان کی حمایت حاصل ہے اور اگر ضرورت پڑی تو وہ اس جنگ میں حصہ لینے کو بھی تیار ہے۔

پاکستان میں وزیراعظم ہاؤس کی جانب سے جاری ہونے والے تحریری بیان میں کہا گیا ہے کہ میاں نواز شریف کی سربراہی میں اسلام آباد میں منعقد ہونے والے اعلیٰ سطحی اجلاس میں مشرقِ وسطیٰ میں ہونے والی حالیہ پیش رفت کا جائزہ لیا گیا۔

اجلاس میں آرمی چیف، فضائیہ کے سربراہ اور وفاقی وزیرِ دفاع نے بھی شرکت کی۔

اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ جمعے کو وزیرِدفاع خواجہ آصف، وزیراعظم کے مشیر برائے خاجہ امور سرتاج عزیز سمیت سینئیر فوجی نمائنیدوں پر مشتمل وفد سعوی عرب روانہ ہوگا اور صورتحال کا جائزہ لےگا۔

اجلاس سے خطاب میں وزیراعظم کا کہنا تھا کہ پاکستان کے سعودی عرب اور دیگر خلیجی تعاون تنظیم میں شامل ممالک کے ساتھ برادرانہ مراسم ہیں اور ان کی سلامتی کو اہمیت دیتا ہے۔

اجلاس میں فیصلہ کیا گیا ہے کہ سعودی عرب کی علاقائی سالمیت کو خطرے پر پاکستان بھرپور ردِعمل دے گا۔

اسی بارے میں