کنٹونمنٹ بورڈز میں بلدیاتی انتخابات

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption انتخابات میں1225 میں سے 130 پولنگ سٹیشنز کو انتھائی حساس قرار دیا گیا ہے

پاکستان میں سنیچر کو 42 کنٹونمنٹ بورڈز میں بلدیاتی انتخابات منعقد ہوئے۔

سرکاری ٹی وی کے مطابق صبح آٹھ بجے شروع ہونے والی پولنگ شام پانچ بجے تک جاری رہی۔

جماعتی بنیادوں پر ہونے والے بلدیاتی انتخابات میں کل 1151 امیداور مدمقابل تھے اور ووٹنگ کے عمل کے لیے 199 حلقوں میں 1225 پولنگ سٹیشنز قائم کیے گئے جن میں سے 130 پولنگ سٹیشنز کو انتہائی حساس قرار دیا گیگ۔

اعدادوشمار کے مطابق ملک بھر کے 18 لاکھ سے زائد رجسٹرڈ ووٹرز کنٹونمنٹ بورڈز کے بلدیاتی انتخابات میں اپنا حق رائے دہی استعمال کیا۔

ان انتخابات میں کل 18 سیاسی جماعتیں حصہ لے رہی تھیں۔ سیاسی جماعتوں سے وابستگی رکھنے والے امیدواروں کی تعداد 541 ہے جبکہ 610 آزاد امیدوار ہیں۔

پی ٹی آئی 137 امیدواروں کے ساتھ سرِفہرست ہے جبکہ حکمراں جماعت مسلم لیگ (ن) کے 128، پاکستان پیپلز پارٹی کے 89، جماعتِ اسلامی کے 74، ایم کیو ایم کے 27، اے این پی کے 13 امیدوار میدان میں ہیں۔

الیکشن کمیشن آف پاکستان نے اسلام آباد میں اپنے مرکزی دفتر میں ایک خصوصی سیل بھی قائم کیا ہے۔

خیال رہے کہ ملک بھر میں کل 43 کنٹونمنٹ بورڈز ہیں تاہم بلوچستان کی اُڑماڑا کنٹونمنٹ بورڈ کی حدود کے تعین کا مسئلہ حل نہیں ہو سکا ہے اس لیے وہاں پر بلدیاتی انتخابات نہیں ہور ہے۔

ایلکشن کمیشن کی درخواست کے پیشِ نظر کنٹونمنٹ بورڈز کی حدود میں سکیورٹی کے لیے فوج اور رینجرز کے 12400 اہلکار تعینات کیے گئے۔

اسی بارے میں