’غیر ملکی عناصر اقتصادی راہداری منصوبے میں رکاوٹ‘

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption وزیراعظم پہلے بھی کہہ چکے ہیں کہ پاکستان کی معاشی ترقی دشمنوں کو پسند نہیں ہے

وزیراعظم نواز شریف کا کہنا ہے کہ کچھ ملکی اور غیر ملکی عناصر پاکستان چین اقتصادی راہداری منصوبے پر عمل درآمد میں رکاؤٹیں ڈالنے کی کوشش کر رہے ہیں۔

جمعے کو اسلام آباد میں چھوٹے کاشت کاروں کو کریڈٹ گارنٹی دینے کی سکیم کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم نواز شریف نے کہا کہ پاکستان چین اقتصادی راہداری ملک کی تقرقی کے لیے انتہائی اہمیت کا حامل منصوبہ ہے۔

’دفاعی پہلو نظر انداز نہیں کیا جا سکتا‘

سرکاری ریڈیو کے مطابق وزیراعظم نے اس کے ساتھ خبردار بھی کیا کہ چند عناصر اس منصوبے کو روکنے کی کوشش کر رہے ہیں۔

’کچھ ملکی اور غیرملکی عناصر اس پر عملدرآمد میں رکاؤٹیں ڈالنے کی کوشش کر رہے ہیں اور یہ قوتیں پاکستان کو ترقی کی راہ پر گامزن نہیں دیکھ سکتیں۔‘

وزیراعظم نواز شریف گذشتہ ماہ چین کے ساتھ اقتصادی راہداری منصوبے پر دستخط کرنے کے بعد سے متعدد بار اس منصوبے کو ناکام کرنے کی مبینہ کوششوں کے بارے میں خبردار کر چکے ہیں۔

تصویر کے کاپی رائٹ BBC Urdu
Image caption پاک چین اقتصادی راہداری کے منصوبے میں خنجراب میں پاکستان اور چین کی سرحد سے لے کر بلوچستان میں گوادر کی بندرگاہ تک سڑکوں اور ریل کے رابطوں کی تعمیر کے علاوہ بجلی پیدا کرنے کے منصوبوں سمیت متعدد ترقیاتی منصوبے شامل ہیں

کراچی میں 13 مئی کو اسماعیلی برادری کی بس پر حملے کے روز ہی وزیراعظم نواز شریف کل جماعتی کانفرنس کی میزبانی کر رہے تھے جس میں اقتصادی راہداری منصوبے پر سیاسی جماعتوں کے رہنماؤں کو اعتماد میں لیا گیا اور اس منصوبے کے ڈیزائن کے بارے میں پائے جانے والے ابہام کو دور کرنے کی کوشش کی گئی۔

اسی روز کراچی میں اسماعیلی برادری کی بس پر حملے میں 45 افراد مارے گئے اور وزیراعظم نے کل جماعتی کانفرنس کے بعد کراچی کا رخ کیا جہاں اعلیٰ سطح کے اجلاس میں انھوں نے کہا کہ ’پاکستان کی معاشی ترقی دشمنوں کو پسند نہیں ہے، اس لیے دشمنوں پر نظر رکھی جائے گی۔‘

اس سے اگلے ہی روز پاکستان کے سیکریٹری خارجہ اعزاز چوہدری نے الزام عائد کیا کہ بھارتی اینٹیلجنس ایجنسی ’را‘ پاکستان میں دہشت گردی کی کارروائیوں میں ملوث ہے۔

سیکریٹری خارجہ کی جانب سے ’را‘ پر الزام کے بیان سے پہلے رواں ماہ پانچ مئی کو پاکستانی فوج کے مطابق کور کمانڈرز کے اجلاس میں بھارتی خفیہ ادارے ’را‘ کی جانب سے ملک میں دہشت گردی کے واقعات کو مبینہ طور پر شہ دینے کا سختی سے نوٹس لیا گیا۔

پاک چین اقتصادی راہداری کے منصوبے میں خنجراب میں پاکستان اور چین کی سرحد سے لے کر بلوچستان میں گوادر کی بندرگاہ تک سڑکوں اور ریل کے رابطوں کی تعمیر کے علاوہ بجلی پیدا کرنے کے منصوبوں سمیت متعدد ترقیاتی منصوبے شامل ہیں۔

اسی بارے میں