’ایک مستحکم پاکستان ہی خوشحال پاکستان کا ضامن ہے‘

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption یہ گذشتہ چند ہفتوں میں جنرل راحیل شریف کا کوئٹہ کا دوسرا دورہ تھا

پاکستانی فوج کے سربراہ جنرل راحیل شریف نے کہا ہے کہ ایک محفوظ اور مستحکم پاکستان ہی ملک میں خوشحالی کا ضامن ہے۔

ان خیالات کا اظہار انھوں نے جمعرات کو کوئٹہ میں کمانڈ اینڈ اسٹاف کالج میں فوجی افسران سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔

جنرل راحیل کا کہنا تھا کہ آپریشن ضرب عضب کی کامیابیوں نے ملک کے شہری کے علاقوں میں دہشت گردوں کے خلاف بڑی اور فیصلہ کن کارروائی کا موقع فراہم کیا ہے ۔

ان کا کہنا تھا کہ دہشت گردی کے ہمیشہ کے لیے خاتمے کی خاطر سیاسی اقدامات کو استعمال میں لانے کے لیے ایک ماحول تیار ہو رہا ہے۔

انھوں نے کہا کہ ’دہشت گردی اور انتہا پسندی کے خلاف ہماری جنگ آج کے لیے نہیں بلکہ ہماری آئندہ نسلوں کے لیے ہے۔‘

فوج کے سربراہ نے کہا کہ صرف مستحکم پاکستان ہی خوشحال پاکستان کا ضامن ہے۔

جنرل راحیل نے کہا کہ جنگیں صرف فوجیں نہیں لڑتیں بلکہ ان کے لیے پوری قوم کی کوششوں اور تعاون کی ضرورت ہوتی ہے ۔

ان کا کہنا تھا کہ پاکستان کو لاحق خطرات پیچیدہ اور کثیر الجہتی ہیں اور ان سے صرف روایتی طریقوں سے نمٹنا کافی نہیں۔

انھوں نے کہا آپریشن ضرب عضب کی کامیابیوں نے شہری علاقوں میں دہشت گردوں کے خلاف فیصلہ کن اور بڑی کارروائی کرنے کا موقع دیا ہے۔

قبل ازیں کمانڈ اینڈ اسٹاف کالج پہنچنے پر فوج کی جنوبی کمان کے سربراہ لیفٹینینٹ جنرل ناصر خان نے فوجی سربراہ کا استقبال کیا۔

یہ گذشتہ چند ہفتوں میں جنرل راحیل شریف کا کوئٹہ کا دوسرا دورہ ہے۔

اس سے قبل وہ بلوچستان کے ضلع کیچ کے علاقے تربت میں 20 مزدوروں کے قتل کے واقعے کے بعد کوئٹہ آئے تھے۔

اس دورے میں انھوں نے صوبے میں سکیورٹی کی مشکلات کا ذکر کرتے ہوئے ان کے حل کے لیے سویلین اور فوجی قیادت کی مربوط کوششوں کی ضرورت پر زور دیا تھا۔

اسی بارے میں