لاہور سے گرفتار تھائی باشندوں کا تعلق داعش سے نہیں: ترجمان

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption گرفتار ہونے والے نوجوان سوات کے ایک مدرسے میں زیر تعلیم تھے

تھائی لینڈ کے حکومتی ترجمان نے کہا ہے کہ پاکستان میں اسلحہ لے کر تھائی لینڈ جانے والے طیارے پر سوار ہونے کی کوشش کرنے والے تھائی باشندوں کا تعلق نہ تو داعش سے ہے اور نہ ہی کسی جرائم پیشہ تنظیم سے ان کے کوئی روابط ہیں۔

تھائی لینڈ کے پانچ باشندوں کو آٹھ جون کو لاہور ایئرپورٹ سے اس وقت گرفتار کر لیا تھا جب وہ طیارے میں سوار ہونے کے لیے آخری رکاوٹ کو عبور کرنے والے تھے۔گرفتار ہونے والے نوجوان سوات کے ایک مدرسے میں زیر تعلیم تھے۔

برطانوی خبر رساں ادارے روئٹرز کےمطابق تھائی لینڈ کی حکومت نے بینکاک کے مقامی اخبار کی اس رپورٹ کے بعد بیان دیا جس میں خدشہ ظاہر کیا گیا تھا کہ گرفتار ہونے والے پانچ نوجوانوں میں دو کا تعلق شدت پسند تنظیم دولت اسلامیہ ہے۔

ایئرپورٹ سکیورٹی فورس کے ایک اہلکار نےنام نہ ظاہر کرنے کی شرط پر بی بی سی کی نامہ نگار صبا اعتزاز کو بتایا کہ پانچ افراد لاہور سے تھائی ایئرویز کی پرواز پر سفر کرنے کے لیے چیک ان کر رہے تھے جب اے ایس ایف کے اہلکاروں نے ان میں سے ایک شخص کے سامان سے ایک 32 بور کا پستول اور گولیاں برآمد کیں جس کے بعد ان کو گرفتار کر لیا گیا۔

ایئر پورٹ سکیورٹی اہلکار کے مطابق یہ پانچ افراد سکیورٹی کا پہلا کاؤنٹر بغیر کسی مسئلے کے عبور کر چکے تھے جہاں نہ صرف ایئر پورٹ سکیورٹی کے افسران موجود ہوتے ہیں بلکہ اینٹی نارکوٹکس فورس اور پاکستان کسٹمز کے اہلکار بھی تعینات ہوتے ہیں ـ

ان کے مطابق اسلحہ آخری سکیورٹی کاؤنٹر سے پکڑا گیا جو روانگی لاؤنج سے بالکل پہلے ہے جس کے بعد مسافر طیارے میں سوار ہو سکتے ہیں ـ اہلکار نے مزید بتایا کہ پستول اور گولیوں کواس قسم کے سلور فوئل میں لپیٹ کر چھپایا گیا تھا جس میں عام طور پر کھانے کی اشیا سٹور کی جاتی ہیں ـ اس حوالے سے تفتیش کرنے کےلیے کراچی سے ایئرپورٹ سکیورٹی اہلکاروں کا وفد لاہور پہنچ چکا ہے جو کہ سی سی ٹی وی فوٹیج کا جائزہ بھی لیں گے تاکہ پتہ لگایا جا سکے کہ یہ افراد پہلا سکیورٹی کاؤنٹر کیسے عبور کر گئے ـ

ایئرپورٹ حدود کے سرور روڈ تھانے کے پولیس اہلکار نے نام نہ ظاہر کرنے کی شرط پر اس بات کی تصدیق کی کہ ان پانچ مشتبہ افراد کے خلاف غیر قانونی اسلحہ لے کر جانے کے جرم میں ایف آیی آر درج کی گئی تھی لیکن انہیں فورا حساس سکیورٹی اداروں نے اپنی تحویل میں لے لیاـ

پاکستانی حکام نے حال ہی میں ایئرپورٹس پر حفاظتی انتظامات سخت کیے ہیں اور اہلکاروں نے کرنسی اور منشیات سمگلنگ کی کئی سرگرمیوں میں ملوث افراد کو گرفتار بھی کیا ہے ـ