’اقتصادی راہداری کے مخالفین کی مہم سے آگاہ ہیں‘

تصویر کے کاپی رائٹ ISPR
Image caption بریفنگ میں بلوچستان کے گورنر ڈاکٹر عبدالمالک بلوچ اور فوج کی جنوبی کمان کے کمانڈر لیفٹینینٹ جنرل ناصر خان جنجوعہ بھی موجود تھے

پاکستان فوج کے سربراہ جنرل راحیل شریف کا کہنا ہے کہ پاکستان اور چین کے اقتصادی راہداری کے منصوبے خلاف اپنے مخالفین کے عزائم سے مکمل طور پر آگاہ ہیں اور مسلح افواج ہر قیمت پراس منصوبے کو مکمل کرنے کے لیے پرعزم ہے۔

پاکستان فوج کے تعلقات عامہ کے شعبے آئی ایس پی آر کے مطابق جنرل راحیل شریف نے سنیچر کو صوبہ بلوچستان کے علاقے پنجگور کا دورہ کیا اور فوج کے تعمیراتی ادارے ایف ڈبلیو او کے زیر انتظام راہداری منصوبے کی زیر تعمیر شاہراہوں کا معائنہ کیا۔

’راہداری منصوبہ صرف ایک سڑک نہیں‘

’دفاعی پہلو نظر انداز نہیں کیا جا سکتا‘

آئی ایس پی آر کے بیان کے مطابق پاکستان چین اقتصادی راہداری کے منصوبے کی تعمیر کے لیے ایف ڈبلیو او کے 11 یونٹس بلوچستان میں کام کر رہے ہیں۔

پنجگور میں جنرل راحیل شریف کو زیر تعمیر سڑکوں پر دی گئی بریفنگ میں بلوچستان کے وزیر اعلیٰ ڈاکٹر عبدالمالک بلوچ اور فوج کی جنوبی کمان کے کمانڈر لیفٹینینٹ جنرل ناصر خان جنجوعہ بھی موجود تھے۔

تصویر کے کاپی رائٹ ISPR
Image caption جنرل راحیل نے فوج کے تعمیراتی ادارے ایف ڈبلیو او کے زیر انتظام راہداری منصوبے کی زیر تعمیر شاہراہوں کا معائنہ کیا

اس موقع پر فوج کے سربراہ نے کہا کہ گوادر پورٹ اور اقتصادی راہداری کا منصوبہ عوام کی زندگیوں میں خوشحالی اور تبدیلی لائے گا۔ جنرل راحیل شریف نے کہا کہ ’اقتصادی راہداری کے خلاف ہم اپنے مخالفین کے عزائم سے پوری طرح آگاہ ہیں۔‘

پاکستان چین اقتصادی راہداری کے منصوبے میں ایف ڈبلیوں او پانچ مقامات پر سڑکیں تعمیر کر رہی ہے۔ آئی ایس پی آر کا کہنا ہے کہ 870 کلو میٹر میں سے 502 کلومیٹر پر کام مکمل کیا جاچکا ہے۔ یہ شاہراہیں گوادر پورٹ کو ملک کے دیگر حصوں سے منسلک کریں گی۔

ان کا کہنا تھا کہ مسلح افواج اس خواب کو حقیقت میں تبدیل کرنے کے لیے ہر قیمت ادا کرنے کے لیے پر عزم ہیں۔

بیان کے مطابق فوج کے سربراہ نے کہا کہ اقتصادی راہداری کے منصوبے اور گوادار کو اہم سٹرٹیجک حیثیت حاصل ہے اور ہر قیمت پر اس کی تعمیر یقینی بنائے جائے گی۔

تصویر کے کاپی رائٹ ISPR
Image caption اس موقع پر فوج کے سربراہ نے کہا کہ گوادر پورٹ اور اقتصادی راہداری کا منصوبہ عوام کی زندگیوں میں خوشحالی اور تبدیلی لائے گا

جنرل راحیل نے بلوچستان کے بہادر عوام کو خراج تحسین پیش کرتے ہوئے ان منصوبوں کے لیے غیر مشروط تعاون اور مدد پر ان کا شکریہ ادا کیا۔

ان کا کہنا تھا کہ بلوچستان میں ان منصوبوں کو آگے بڑھانے کے لیے ایک پر امن ماحول ضروری ہے۔ آئی ایس پی آر کے مطابق فوج کے سربراہ نے فرنٹیئر کور اور پولیس کی غیر ملکی مدد سے چلنے والے دہشت گردوں کے خلاف آپریشن کی تعریف کی۔

یاد رہے کہ رواں سال چین کے صدر کی پاکستان آمد پر پاکستان چین اقتصادی راہداری کے منصوبے پر دستخط ہوئے تھے۔ جس کے تحت گودار سے کاشغر تک اقتصادی راہدی بنائی جائے گی۔

پاکستان اور چین کے درمیان اربوں ڈالر کی مالیت کے اقتصادی راہداری کے منصوبے پر بھارت نے اپنے تحفظات کا اظہار کیا تھا۔

اسی بارے میں