ممتاز قادری پر سینکڑوں ٹوئٹس

تصویر کے کاپی رائٹ Twitter

سپریم کورٹ میں سلمان تاثیر کے قاتل ممتاز قادری کی اپیل کی سماعت کے موقعے پر جہاں ان کے حامی جلسے جلوسوں میں مصروف ہیں وہیں پاکستانی ٹوئٹر پر ان کے خلاف ایک ٹرینڈ پہلی بار بڑے پیمانے پر سامنے آیا ہے۔

قادری کو لٹکاؤ انسانیت بچاؤ کے ہیش ٹیگ کے ساتھ اب تک سینکڑوں ٹویٹس کی جا چکی ہیں اور ان میں وقت کے ساتھ اضافہ ہو رہا ہے اور یہ پاکستان میں اس وقت سب سے بڑا ٹرینڈ ہے۔

اکثریت ایسی ٹویٹس کی ہے جن میں ممتاز قادری پر تنقید کی گئی ہے۔

غلام علی نے ٹویٹ کی: ’قادری کے کیس کو فوجی عدالتوں کے حولے کیا جانا چاہیے، پھر دیکھتے ہیں کتنے حمایتی فوجیوں کی جانب مارچ کرتے ہیں۔‘

ان کا اشارہ گذشتہ روز ممتاز قادری کے حمایتوں کی جانب سے ریڈ زون میں داخلے کی کوشش کی جانب تھا جس پر درجنوں حمایتیوں کو گرفتار کر لیا گیا تھا۔

وقاص جتوئی نے لکھا کہ ’اگر توہین مذہب اور رسالت کا قانون موجود ہے تو قادری نے سلمان تاثیر کو قتل کیوں کیا؟ اگر قتل جائز ہے تو اس قانون کی کیا ضرورت ہے؟‘

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption ممتاز قادری کی اپیل کی سماعت ان دنوں سپریم کورٹ میں ہو رہی ہے

جنید نے ٹویٹ کی کہ ’ملا گردی کو شکست دینے کا اس سے اچھا موقع شاید پھر کبھی نہ آ سکے، اسے ضائع مت کرو۔‘

اس ساری بحث اور ٹرینڈ میں طنز اور تنقید سے بھرپور ٹویٹس بھی شامل تھیں۔

شفیع داور: ’اگر قادری کو شہادت کا شوق ہے تو کیس کیوں لڑ رہا ہے؟‘

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption ممتاز قادری گورنر پنجاب سلمان تاثیر کی حفاظت پر مامور تھا جب اُس نے انہیں قتل کیا۔

ثوبان: ’ممتاز قادری جیسے لوگ مذہب کی حفاظت نہیں کرتے بلکہ جرائم کرنے کے بعد مذہب کو اپنی حفاظت کے لیے استعمال کرتے ہیں۔‘

شعیب ملک نے ممتاز قادری کے حق میں لکھا: ’بے گناہ قتل کرنے والے ممتاز قاتل کو اکسانے والا مولوی بھی پکڑا جائے جو ناموسِ رسالت کے نام پر دہشت گردی کو ہوا دے رہا تھا۔‘

اسی طرح فہد خان نے لکھا: ’قادری کے ساتھ وہ لوگ بھی قاتل ہیں جنھوں نے ممتاز قادری کے دل میں زہر کا بیج بویا‘ اور جنید قیصر نے لکھا کہ ’پاکستان میں ضرب عضب جیسے آپریشن اُس وقت تک کامیاب نہیں ہوسکتے جب تک #قادری_لٹکاؤ_انسانیت_بچاؤ جیسے اقدام سے انتہا پسندی کاخاتمہ نہیں کیا جاتا۔‘

اسی بارے میں