گیتا نے اپنے خاندان کی شناخت کر لی، ایدھی فاؤنڈیشن کا دعویٰ

Image caption گیتا گذشتہ 13 برسوں سے فلاحی ادارے ایدھی فاؤنڈیشن کے پاس ہیں

پاکستانی فلاحی ادارے ایدھی فاؤنڈیشن کے منتظمین کا کہنا ہے کہ کراچی میں ادارے کے پاس مقیم 22 سالہ بھارتی لڑکی گیتا نے اپنے والدین کی شناخت کرلی ہے۔

ادھر بھارتی حکومت کا کہنا ہے کہ گیتا کی بھارت واپسی کی تیاریاں تقریباً مکمل ہیں لیکن اسے اس وقت تک کسی کے سپرد نہیں کیا جائے گا جب تک ڈی این اے ٹیسٹ سے یہ تصدیق نہیں ہو جاتی کہ دعویٰ کرنے والے واقعی اس کے والدین ہیں۔

گیتا کی واپسی: عدالت کو سفارتی معاملات میں مداخلت کا اختیار نہیں

پاکستان میں رہنے والی گیتا تو بجرنگی بھائی جان کی تلاش

گیتا ہماری بیٹی ہے، چار بھارتی خاندانوں کا دعویٰ

ایدھی فاؤنڈیشن کے نگران فیصل ایدھی کا کہنا ہے کہ گیتا نے تصاویر کی مدد سے اپنے والد، سوتیلی ماں اور بہن بھائیوں کو شناخت کیا ہے۔

ان کے مطابق اسلام آباد میں بھارتی ہائی کمیشن نے انہیں کچھ تصاویر بھیجی تھیں جن میں سے ایک کو گیتا نے پہچانا ہے۔

خیال رہے کہ گیتا قوتِ سماعت و گویائی سے محروم ہیں۔

ایدھی فاؤنڈیشن کے سینیئر رضاکار انور کاظمی کا کہنا ہے کہ گیتا نے اپنے والد اور بہن بھائیوں کی شناخت کی۔ ان کے مطابق اس خاندان کا تعلق ریاست بہار سے ہے۔

اپ کی ڈیوائس پر پلے بیک سپورٹ دستیاب نہیں

انور کاظمی کے مطابق اب ان کی سکائپ پر بات کروائی جائے گی، جس سے مزید تصدیق ہو جائے گی۔

دہلی میں بی بی سی کے نامہ نگار سہیل حلیم کے مطابق جمعرات کو بھارتی وزارت خارجہ کے ترجمان نے کہا ہے کہ ’گیتا کو ہم نے تین مختلف فوٹو گراف بھجوائے تو اور ان میں سے ایک کو دیکھ کر اس نے کہا کہ وہ ممکنہ طور پر اس کے والدین ہو سکتے ہیں۔۔۔ لیکن گیتا کو ڈی این اے ٹیسٹ سے تصدیق ہو جانے کے بعد ہی کسی کے سپرد کیا جائےگا۔‘

انھوں نے یہ بھی کہا کہ اگر گیتا کے والدین نہیں مل پاتے تو اسے ایسے کسی ادارے میں رکھا جائے گا جہاں اس کی مناسب دیکھ بھال ہو سکے اور حکومت نے اندور اور دہلی میں ایسے دو اداروں کا انتخاب کیا ہے۔

گیتا گذشتہ 13 برسوں سے فلاحی ادارے ایدھی فاؤنڈیشن میں مقیم ہیں۔

وہ واہگہ بارڈر سے اتفاقی طور پر بذریعہ سمجھوتہ ایکسپریس پاکستان کی حدود میں داخل ہوئی تھیں۔ لاہور پولیس نے انھیں ایدھی فاؤنڈیشن کے حوالے کیا اور کچھ عرصہ لاہور اور اسلام آباد میں مقیم رہنے کے بعد میں انھیں کراچی منتقل کر دیا گیا تھا۔

کچھ عرصہ قبل اداکار سلمان خان کی فلم ’بجرنگی بھائی جان‘ میں ایک ایسی ہی بچی کا کردار سامنے آنے کے بعد گیتا کی کہانی میڈیا میں دوبارہ سامنے آئی تھی۔

اسی بارے میں