شدید برف باری کے باعث سینکڑوں سیاح کاغان اور ناران میں محصور

Image caption ہر سال ہزاروں سیاح وادی کاغان اور ناران کا رخ کرتے ہیں

پاکستان کے صوبہ خیبر پختونخواہ کے ضلع مانسہرہ کے سیاحتی مقامات کاغان اور ناران میں شدید برفباری کے نتیجے میں وہاں سینکڑوں سیاح محصور ہوگئے ہیں جنھیں محفوظ مقام پر منتقل کرنے کے لیے کوششیں جاری ہیں۔

دارالحکومت اسلام آباد اور اس سے ملحقہ شہر راولپنڈی میں بھی گذشتہ ایک روز سے وفقے وقفے سے بارش کا سلسہ جاری ہے۔

ریڈیو پاکستان کے مطابق کاغان میں گذشتہ 24 گھنٹے کے دوران شدید برف باری ہوئی ہے جس کی وجہ سے ناران اور بالاکوٹ کے درمیان سڑک بند ہوگئی ہے جس سے علاقے میں سینکڑوں سیاح پھنس گئے ہیں۔

فوج کے شعبہ تعلقات عامہ کے حوالے سے بتایا گیا ہے کہ ناران کے بھروایی روڈ پر پھنسے 50 سیاحوں کو نکال لیا گیا ہے۔

خبر رساں ادارے اے پی پی کے مطابق قدرتی آفات سے نمٹنے کے ادارے نیشنل ڈیزاسٹر مینیجمنٹ اتھارٹی کا کہنا ہے کہ وادی کاغان اور ناران میں محصور سیاحوں کو ہیلی کاپٹر سروس فراہم کی جائے گی تاہم اس کے لیے دن کی روشنی اور موسم کی بہتری کا انتظار کیا جا رہا ہے۔

Image caption شمالی علاقوں میں مزید برفباری کا امکان ہے

این ڈی ایم اے حکام نے نیشنل ہائی وے اتھارٹی کو کاغان، ناران روڈ کو کھولنے کی ہدایات جاری کی ہیں۔

ادارے کی جانب سے وادی ناران کی بابو سر ٹاپ سے آنے والے سیاحوں کو کہا گیا کہ وہ اپنی گاڑیوں کو چھوڑ کر قریبی محفوظ مقام پر منتقل ہو جائیں اور صورتحال کی بہتری کا انتظار کریں۔

محکمہ موسمیات کی پیش گوئی کے مطابق آئندہ 24 گھنٹوں کے دوران اسلام آباد اور راولپنڈی سمیت بالائی علاقوں جن میں صوبہ خیبر پختونخوا اور کشمیر میں بارش کا سلسلہ جاری رہے گا جبکہ شمالی علاقوں میں مزید برفباری کا امکان ہے۔

گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران سب سے زیادہ بارش بالاکوٹ، کاکول اور کوہاٹ میں ہوئی جو 52 ملی میٹر تھی۔

پنجاب میں سب سے زیادہ بارش کامرہ میں 46 ملی میٹر ریکارڈ کی گئی۔ مظفر اباد میں 41 ملی میٹر بارش ہوئی۔