کراچی میں فائرنگ سے دو پولیس اہلکار ہلاک

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption کراچی میں پولیس اہلکاروں پر مسلح حملوں کی خبریں اکثر اوقات سامنے آتی ہیں

پاکستان کے شہر کراچی میں نارتھ ناظم آباد تھانے کی حدود میں حیدری مارکیٹ کے قریب دو پولیس اہلکاروں کو گولیاں مار کر ہلاک کر دیا گیا ہے۔

علاقے کے ایس پی فیصل نور نے بی بی سی کو بتایا کہ ہلاک والے دونوں اہلکار پولیو مہم کے دوران اپنے فرائض سرانجام دینے کے بعد ولی خان بابر قتل کیس میں وکیلِ استغاثہ نعمت رندھاوا کے گھر پر اپنی ڈیوٹی دینے کے لیے جا رہے تھے کہ وہاں پَری لان کے قریب ایک موٹر سائیل پر سوار دو افراد نے ان پر فائرنگ کر دی۔

پولیس کے مطابق ہلاک ہونے والوں کے نام کانسٹیبل شاہ نواز اور کانسٹیبل محمد اسلم تھے۔

ایس پی فیصل نور کےمطابق عینی شاہدین نے بتایا ہے کہ حملہ آوروں میں سے ایک شخص نے میڈیکل ماسک پہن رکھا تھا جبکہ دوسرے شخص کی ہلکی سی داڑھی تھی۔

فیصل نور نے بتایا کہ ہلاک ہونے والے اہلکاروں کے جسم سے جو گولیاں نکلی ہیں وہ نائن ایم ایم پستول کی ہیں اور ایسی ہی گولیاں اس سے پہلے لیاقت آباد میں بھی پولیس پر حملے میں استعمال ہو چکی ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ مزید تفصیلات پوسٹ مارٹم رپورٹ کے بعد ہی بتائی جا سکتی ہیں۔

انھوں نے مقامی میڈیا پر چلنے والی ان خبروں پر تبصرہ کرنے سے انکار کیا جس کے مطابق ہلاک ہونے والے اہلکار ڈاکوؤں کا پیچھا کر رہے تھے۔

اسی بارے میں