لاہور میں طیارے کی ہنگامی لینڈنگ، دس مسافر زخمی

تصویر کے کاپی رائٹ Kashif Zulfiqar
Image caption طیارے میں عملے سمیت 100 سے زائد سوار تھے

لاہور کے بین الاقوامی ہوائی اڈے پر نجی ایئرلائن شاہین ایئر انٹرنیشل کا طیارہ رن وے سے پھسلنے کے نتیجے میں حادثے کے شکار ہوا۔

حادثے کے نتیجے میں طیارے کے لینڈنگ گیئر، انجن اور باڈی کو نقصان پہنچا اور دس مسافروں کے زخمی ہونے کی اطلاعات ملی ہیں۔

طیارے میں سو سے زیادہ مسافر اور عملے کے ارکان سوار تھے جن میں سے دس کو معمولی چوٹیں آئیں۔

سول ایوی ایشن کے ترجمان پرویز جارج نے بی بی سی کو بتایا کہ ’شاہین ایئر کے بوئنگ 737 طیارہ جو کراچی سے لاہور پرواز این ایل 142 پر صبح نو بج کر ستائیس منٹ پر لاہور پہنچا تھا۔ طیارہ رن وے پر اترنے کے بعد توازن کھو کر بائیں جانب مڑ کر رن وے سے اتر گیا جس کے نتیجے میں طیارے کے مسافروں اور عملے کو ہوائی اڈے کی انتظامیہ نے ہنگامی راستوں سے اتارا۔‘

حادثے کے بعد ہوائی اڈے سے موصول ہونے والی تصاویر میں طیارے کے ایک لینڈنگ گیئر کو طیارے سے علیحدہ دیکھا جا سکتا ہے۔

تصویر کے کاپی رائٹ
Image caption عینی شاہدین کے مطابق طیارے کا ایک پہیہ جہاز سے علیحدہ ہو گیا

یاد رہے کہ اس سے قبل شاہین ایئر کے اسی قسم کے طیارے بوئنگ 737 کو گذشتہ سال 30 دسمبر کو اسی نوعیت کا حادثہ لاہور کے ہوائی اڈے پر اترنے کے بعد پیش آیا تھا۔

اس حادثے میں بھی طیارہ اترنے کے بعد بائیں جانب مڑ گیا جس کے نتیجے میں اس کے لینڈنگ گیئر کو نقصان پہنچا تھا جس کے بعد سے طیارہ پرواز کے قابل نہیں رہا۔

تصویر کے کاپی رائٹ Kashif Zulfiqar
Image caption حادثے کے نتیجے میں طیارے کے لینڈنگ گیئر، انجن اور باڈی کو نقصان پہنچا

اس حادثے میں بھی کسی قسم کا جانی نقصان نہیں ہوا نہ مسافروں میں کوئی زخمی ہوا۔

اسی بارے میں