غیرمسلم طالبہ کے بیت الخلا کے استعمال پر پابندی کی تحقیقات

تصویر کے کاپی رائٹ PID
Image caption چیئرمین سینیٹ رضا ربانی نے قائد ایوان سے کہا کہ وہ اس معاملے کی تحقیقات کروا کے رپورٹ پیش کریں

پاکستانی سینیٹ کے چیئرمین رضا ربانی نے قائد ایوان سے فیصل آباد کے ایک سکول میں مبینہ طور پر ایک غیرمسلم طالبہ کو بیت الخلا استعمال کرنے کی اجازت نہ دینے کی اطلاعات کی تحقیقات کا حکم دیا ہے۔

منگل کو سینیٹ کے اجلاس میں سینیٹر شیری رحمٰن نے کہا کہ ایک اخباری خبر کے مطابق فیصل آباد کے ایک سکول میں ایک مسیحی طالبہ کو غیرمسلم ہونے کی وجہ سے بیت الخلا استعمال کرنے کی اجازت نہیں دی گئی اور ہیڈ مسٹرس نے طالبہ کو کافر کہا۔

چیئرمین سینٹ رضا ربانی نے قائد ایوان سے کہا کہ وہ اس معاملے کی تحقیقات کروا کے رپورٹ پیش کریں۔

سینیٹر کریم خواجہ نے کہا کہ پنجاب میں بلدیاتی انتخابات میں بعض کالعدم تنظیموں نے بھی حصہ لیا ہے۔ چیئرمین نے انھیں کہا کہ وہ اس معاملے پر تحریک پیش کریں تاکہ حکومت سے جواب طلبی کی جا سکے۔

سینیٹ میں 26 اکتوبر کو آنے والے زلزلے سے ہونے والے نقصانات پر بھی گرما گرم بحث ہوئی۔ وزیر مملکت جام کمال نے ایوان کو بتایا کہ زلزلے سے مجموعی طور پر 280 اموات ہوئیں جن میں سے 260 کے ورثا کو معاوضہ ادا کردیا گیا ہے جبکہ 470 زخمیوں کو بھی معاوضے کی ادائیگی کر دی گئی ہے۔

متحدہ قومی موومینٹ کے سنیٹر طاہر مشہدی نے ملک میں تعمیراتی ضابطوں پر عمل درآمد نہ ہونے کے متعلق تحریک التوا پیش کی۔ انھوں نے کہا کہ پاکستان انجینیئرنگ کونسل تعمیراتی ضابطوں پر عمل درآمد میں ناکام رہی ہے جس کے نتیجے میں ملک میں ہر سال عمارتیں گرنے کی وجہ سے کئی انسانی جانیں ضائع ہو جاتی ہیں۔

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption یہ معاملہ شیری رحمان نےسینیٹ میں اٹھایا

ایم کیو ایم ہی کی سینیٹر نسرین جلیل نے کہا کہ حکومت سرکاری اداروں کو تعمیراتی ضابطوں پر عمل درآمد یقینی بنانے کا پابند کرے۔

امیر جماعت اسلامی سینیٹر سراج الحق نے زور دیا کہ حکومت زلزلہ زدگان کے لیے اعلان کردہ معاوضے میں اضافہ کرے۔

مسلم لیگ ق کے سینیٹر مشاہد حسین سید نے کہا کہ پاکستان میں قدرتی آفات سے نمٹنے کا کوئی موثر نظام موجود نہیں۔انھوں نے قدرتی آفتوں سے نمٹنے کے لیے باقاعدہ وزارت بنانے کا مطالبہ کیا۔

چیئرمین سینیٹ نے وزیر مملکت شیخ آفتاب احمد کی اجلاس میں تاخیر پر آمد پر سخت برہمی کا اظہار کیا۔ مسٹر آفتاب کا کہنا تھا کہ انھیں وزیر اعظم نے بلا لیا تھا جس پر رضا ربانی نے کہا کہ پارلیمان میں آنا ضروری ہے یا وزیر اعظم کے سامنے حاضر ہونا لازمی ہے؟ انھوں نے کہا کہ آئندہ وزرا کے ایوان میں حاضر نہ ہونے کی صورت میں سخت احکامات جاری کیے جائیں گے۔

پیپلز پارٹی کے سینیٹر سعید غنی نے کہا کہ وزیر اعظم کے ترجمان مصدق ملک کو پاکستان سٹیٹ آئل کے بورڈ آف مینیجمنٹ کا چیئرمین مقرر کردیا گیا ہے۔ انھوں نے کہا کہ وزیر اعظم کے ترجمان کو اس عہدے پر کیسے فائز کیا جا سکتا ہے۔ چیئرمین نے اس معاملے کو متعلقہ قائمہ کمیٹی کے سپرد کر دیا۔

حزب اختلاف کے ارکان نے قطر کے ساتھ ایل این جی کے معاہدوں پر شفافیت پر بھی سوال اٹھایا اور کہا کہ حکومت اس معاملے پر حقائق چھپارہی ہے۔ حزب اختلاف کے ارکان نے ان معاہدوں میں مبینہ بے ضابطگیوں کے خلاف ایوان سے واک آؤٹ کیا۔

اسی بارے میں